مختلف حلقوں میں (ن) کے مقامی رہنمائوں ،بلدیاتی نمائندوںکاامیدواروں کیخلاف احتجاج کا سلسلہ جاری

بلال یاسین کیخلاف ابوبکر چوک سے ابراہیم چوک تک احتجاجی ریلی نکالی گئی،ٹکٹ دیا گیا تو احتجاجی دھرنا دیا جائے گا ‘ مظاہرین (ن) لیگ ساہیوال کے کارکنوں کا ملک ارشد ایڈووکیٹ کو ٹکٹ جاری کرنے کے فیصلے کے خلاف مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹائون کے باہر احتجاج ملک ریاض ،سمیع اللہ خان کے خلاف حلقوں میں احتجاجی بینرز آویزاں ،بلدیاتی نمائندوں کا توصیف شاہ کو ٹکٹ ملنے کیخلاف دوسرے روز احتجاج کارکنوںنے سابق رکن اسمبلی وحید گل کے خلاف بھی احتجاجی مظاہرہ کیا /ایک مخصوص طبقہ میرے خلاف مہم چلا رہا ہے ‘ وحید گل کی گفتگو

اتوار جون 20:30

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) مسلم لیگ (ن)کی ٹکٹوں کی تقسیم کے معاملے پر مختلف حلقوں میں مسلم لیگ (ن) کے مقامی رہنمائوں اور بلدیاتی نمائندوںکی جانب سے امیدواروں کیخلاف احتجاج کا سلسلہ دوسرے روز بھی جاری رہا ،فیصلوں پر نظر ثانی نہ کرنے کی صورت میں احتجاجی دھرنا دینے اور امیدواروں کو سپورٹ نہ کرنے کا بھی اعلان کر دیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق بلدیاتی نمائندوں اور کارکنوں کی جانب سے سابق صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین کے خلاف حلقے میں بینرز آویزاںکرنے کے بعد گزشتہ روز ابوبکر چوک سے ابراہیم چوک تک احتجاجی ریلی نکالی گئی جس میں چیئرمینز ، وائس چیئرمینز ،کونسلر ز اور کارکنوںکی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ گزشتہ پانچ سالوں کے دوران بلال یاسین نے حلقے کے لئے کوئی کام نہیں کیا ۔

(جاری ہے)

قیادت سے مطالبہ ہے کہ پی پی 153سے بلال یاسین کوٹکٹ نہ دیا جائے ۔ مظاہرین نے کہاکہ اگر پارٹی کی جانب سے بلال یاسین کو ٹکٹ دیا گیا تو پھراحتجاجی دھرنا بھی دیا جائے گا اور کارکن بلال یاسین کو سپورٹ بھی نہیں کریں گے ۔مسلم لیگ (ن) ساہیوال کے کارکنوں نے ملک ارشد ایڈووکیٹ کو ٹکٹ جاری کرنے کے فیصلے کے خلاف مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹائون کے باہر احتجاج کیا ۔

مظاہرین کا کہنا تھاکہ قیادت قربانیاں دینے والوں کو نظر انداز نہ کرے اگر پارٹی کی جانب سے ملک ارشد کو دیا جانے والا ٹکٹ واپس نہ لیا گیا تو ماڈل ٹائون کے باہر احتجاج دھرنا دیں گے ۔ سابق رکن قومی اسمبلی ملک ریاض کے حلقے سے تعلق رکھنے والے بلدیاتی نمائندوں کی جانب سے بھی تاحال مختلف مقامات پر احتجاجی بینرز آویزاں ہیں ۔ مسلم لیگ (ن) کے کارکنوںنے شاہدرہ سے پارٹی رہنما سمیع اللہ خان کے خلاف بھی احتجاجی بینرز آویزاں کر رکھے ہیں اور قیادت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ پی پی 144سے حقیقی کارکن کو ٹکٹ دیا جائے ۔

سید توصیف شاہ کو ٹکٹ ملنے کے خلاف بھی مختلف یونین کونسلوں کے چیئرمینز،وائس چیئرمینز اور کونسلرز نے مسلسل دوسرے بھی احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا ۔مسلم لیگ (ن) کے کارکنوںنے سابق رکن اسمبلی وحید گل کے خلاف بھی احتجاجی مظاہرہ کیا اور قیادت سے مطالبہ کیا کہ وحید گل کو آئندہ ٹکٹ جاری نہ کیا جائے ۔ سابق رکن اسمبلی وحید گل نے کہا ہے کہ گزشتہ دور میں اپنے حلقے میں بے پناہ ترقیاتی کام کرائے ۔حلقے میں ایک مخصوص طبقہ میرے خلاف مہم چلا رہا ہے مگر آخر میں جیت مسلم لیگ (ن ) کی ہی ہوگی اور لوگوں کے خدشات دور ہوجائیں گے۔