متحدہ قبائل پارٹی اور تحریک جوانان پاکستان کا مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں وزیرا عظم ہائوس کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان

نگران حکومت کی نگرانی میں فاٹا میں صوبائی نشستوں کے انتخابات ہوں، ہم چیف جسٹس سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ دھرنے کے شرکاء سے خود ملاقات کریں، ( آج) ہم پھر الیکشن کمیشن کی طرف مارچ کریں گے ، فاٹا کی 12سیٹوں پر انتخابات ہو سکتے ہیں تو 16سیٹوں پر ایک سال بعد انتخابات کرانے کا کیا مقصد ہے ،ہم آج اپنے حقوق کے لئے پر امن دھرنا دے رہے ہیں ، اور ہم پر امن دھرنا جاری رکھیں گے، عبد اللہ گل اور حبیب اورکزئی کا پر یس کا نفر س سے خطاب

اتوار جون 20:40

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) متحدہ قبائل پارٹی اور تحریک جوانان پاکستان نے مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں وزیرا عظم ہائوس کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان کر تے ہوئے کہا ہے کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ نگران حکومت کی نگرانی میں فاٹا میں صوبائی نشستوں کے انتخابات ہوں، ہم چیف جسٹس سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ دھرنے کے شرکاء سے خود ملاقات کریں، ( آج) ہم پھر الیکشن کمیشن کی طرف مارچ کریں گے ، ہمارے مطالبات نہ مانے گئے تو ہم وزیراعظم ہائوس کے سامنے دھرنا دیں گے ، قبائلیوں نے ملک کے لئے قربانیاں دیں ہیں،ہم آج اپنے حقوق کے لئے پر امن دھرنا دے رہے ہیں ، اور ہم پر امن دھرنا جاری رکھیں گے، ان خیالات کا اظہار اتوار کو نیشنل پریس کلب میںمتحدہ قبائل پارٹی کے چیئرمین حبیب اورکزئی اور تحریک جوانان پاکستان کے چیئرمین عبداللہ گل نے پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے نے کیا ۔

(جاری ہے)

حبیب اورکزئی نے کہا کہ متحدہ قبائل پارٹی نے ایک ہفتے سے دھرنا دیا ہوا ہے ، ملک میں عام انتخابات 25جولائی کو ہوں گے لیکن فاٹا میں صوبائی صوبائی نشستوں پر الیکشن کا کوئی پلان نہیں بنایا گیا ، انہوں نے کہا کہ دھرنے میں تحریک جوانان پاکستان کے ہزاروں کارکن بھی ہمارے ساتھ ہیں ، متحدہ قبائل پارٹی کی ڈیمانڈ ہے کہ نگران حکومت کی نگرانی میں فاٹا میں صوبائی نشستوں کے انتخابات ہوں ، وہ علاقے 70سولوں سے اندھیروں میں ڈوبے ہوئے ہیں ، ہم وہاں کی آواز اٹھائیں گے ، انہوں نے کہا کہ ہمارے دھرنے کا7واں دن ہے لیکن ہماری کوئی شنوائی نہیں ہوئی ، ( آج) ہم پھر الیکشن کمیشن کی طرف مارچ کریں گے ، ہمارے مطالبات نہ مانے گئے تو ہم وزیراعظم ہائوس کے سامنے دھرنا دیں گے ، انہوں نے کہا کہ یہ دھرنا بڑھتا جائے گا ہمارا مطالبہ ہے کہ فاٹا میں 25جولائی کو ہی صوبائی نشستوں کے لئے الیکشن ہوں ، اور اکتوبر میں بلدیاتی الیکشن بھی ہونے چاہئیں ۔

اس موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے تحریک جوانان پاکستان کے چیئرمین عبد اللہ گل نے کہا کہ فاٹا کی 12سیٹوں پر انتخابات ہو سکتے ہیں تو 16سیٹوں پر ایک سال بعد انتخابات کرانے کا کیا مقصد ہے ،ہم آج اپنے حقوق کے لئے پر امن دھرنا دے رہے ہیں ، اور ہم پر امن دھرنا جاری رکھیں گے انہوں نے کہا کہ ہم چیف جسٹس سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ دھرنے کے شرکاء سے خود ملاقات کریں ، عبداللہ گل نے کہا کہ تحریک جوانان پاکستا ن کے پورے ملک سے کارکن یہاں موجود ہیں ، یہ ہمارا مشترکہ دھرنا ہے ، ہم دھرنے سے نہیں ہٹیں گے، اس موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے متحدہ قبائل پارٹی کے وائس چیئرمین حبیب نو رنے کہا کہ آج تک کوئی بھی حکومتی نمائندہ ہمارے پاس نہیں آیا، ہم اپنا مطالبہ لے کر یہاں سے جائیں گے ، اس موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے تحریک جوانان پاکستان جنوبی پنجاب کے رہنماء دائود جتوئی نے کہا کہ عوام کا کیا قصور ہے کہ وہ اتنی گرمی میں ووٹ ڈالنے جائیں ، اوور سیز پاکستانیوں سے ووٹ ڈالنے کا حق چھین لیا گیا ہے وہ بھی ووٹ کاسٹ نہیں کر سکتے ، انہوں نے کہا کہ 70فیصد پولنگ اسٹیشنوں پر بجلی نہیں ہے ، گرمی میں الیکشن نہیں ہو سکتا، ابھی الیکشن کمیشن نے حلقہ بندیاں بھی صحیح نہیں کیں ۔