ایون فیلڈ ریفرنس، پاناما جے آئی ٹی کی رپورٹ ناقابل قبول شواہد ہے،

سابق وزیر اعظم کے وکیل خواجہ حارث کے دلائل

پیر جون 12:21

ایون فیلڈ ریفرنس، پاناما جے آئی ٹی کی رپورٹ ناقابل قبول شواہد ہے،
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کی سماعت کے دوران سابق وزیراعظم نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے پانچویں روز حتمی دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پاناما جے آئی ٹی کی رپورٹ ناقابل قبول شواہد ہے پیر کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنس کی سماعت کی ۔

(جاری ہے)

سماعت شروع ہوئی تو جج محمد بشیر نے استفسار کیا کہ ملزمان میں سے کوئی بھی نظر نہیں آرہا۔

جس پر خواجہ حارث نے جواب دیا کہ کیپٹن (ر)صفدر تھوڑی دیر میں پیش ہوجائیں گے۔۔تاہم تھوڑی ہی دیر میں کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کمرہ عدالت میں پہنچ گئے۔۔سماعت کے باقاعدہ آغاز پر خواجہ حارث نے حتمی دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پاناما جے آئی ٹی کی رپورٹ ناقابل قبول شواہد ہے۔خواجہ حارث نے مزید کہا کہ وہ پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاکے بیان کے دوسرے حصے کے حوالے سے دلائل دیں گے۔