نئے شامی مہاجرین کو قبول نہیں کیا جائے گا، اٴْردن کا اعلان

اردن قومی مفادات کے تحفظ کے لیے امریکا اور روس کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے،حکومتی ترجمان

پیر جون 15:30

عمان(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) اٴْردن نے کہا ہے کہ شامی حکومت کی جانب سے اٴْردن کی سرحد کے قریب شام کے جنوبی حصے میں شروع کی گئی نئی کارروائی کے سبب وہاں سے نکلنے والے مزید شامی باشندوں کو اٴْردن میں قبول نہیں کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

عرب ٹی وی کے مطابق شامی فورسز جنوبی صوبہ درعا میں پیشقدمی جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اس دوران امریکا نے باغیوں سے کہا کہ وہ اس بات کی توقع نہ رکھیں کہ امریکا ان کے دفاع کے لیے کوئی کارروائی کرے گا۔ اردن حکومت کی خاتون ترجمان جمانہ غنیمات نے کہا کہ اردن قومی مفادات کے تحفظ کے لیے امریکا اور روس کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔ اٴْردن میں اس وقت بھی 660,000 رجسٹرد شامی مہاجرین پناہ لیے ہوئے ہیں۔

متعلقہ عنوان :