کسی مہذب معاشرے میں عام شہریوں اور نہتے مظاہرین پر گولیاں نہیں برسائی جاتیں،قاضی یاسر

بھارتی فورسز وادی بالخصوص جنوبی کشمیر میں نسل کشی میں مصروف ہیں،13سالہ بچے کو قتل کرنا مہذب عمل نہیں، چیئرمین امت اسلامی

پیر جون 20:45

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) مقبوضہ کشمیر میں امت اسلامی کے نظربند چیئرمین قاضی یاسر نے جنوبی کشمیر میں جاری قتل وغارت کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی فورسز وادی بالخصوص جنوبی کشمیر میں نسل کشی میں مصروف ہیں۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق قاضی یاسر نے ایک بیان میں کہاکہ کشمیر میںقتل و غارت اور غیر انسانی سلوک پر کوئی روک ٹوک نہیں ہے اورلگتا ہے کہ نام نہاد جنگ بندی کے دوران بھارتی فورسز اس نسل کشی کی منصوبہ بند ی کررہے تھے۔

(جاری ہے)

قاضی یاسر نے کہاکہ کسی مہذب معاشرے میں عام شہریوں اور نہتے مظاہرین پر گولیاں نہیں برسائی جاتی ہیں اور 13سالہ بچے کوقتل کرناکوئی مہذب عمل نہیں ہے۔ انہوں کہا کہ بھارتی فورسز کے سر شرم سے جھک جانے چاہیے لیکن بھارتی ذرائع ابلاغ کشمیر میں نہتے شہریوں کے قتل پر خوشیاں منارہے ہیں۔ قاضی یاسر نے قتل و غارت کا سلسلہ بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ تمام سیاسی نظربندوں کو رہا اور جنوبی کشمیر میں چھاپوں کا سلسلہ بند کیا جانا چاہئے۔ انہوںنے کہا بھارتی فورسز ہر سطح پر ہمیں ہراساں کررہی ہیں۔ انہوں نے پوچھا کہ فورسز کس قسم کا امن چاہتی ہیں ۔

متعلقہ عنوان :