الیکشن ٹربیونل ملتان نے 162چوہدری نذیر احمد آرائیں کو الیکشن میں حصہ لینے سے روک دیا

پیر جون 23:20

بورے والا :(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) الیکشن ٹربیونل ملتان نے بورے والا سے مسلم لیگ ن کے نامزد امیدوار این اے 162چوہدری نذیر احمد آرائیں کی کاغذات نامزدگی بحال کرنے کی رٹ مسترد کرتے ہوئے الیکشن میں حصہ لینے کے لیے نا اہل قرار دے دیا ۔

(جاری ہے)

ٹربیونل نے نذیر آرائیں کی طر ف سے اثاثے چھپانے اور سرکاری اراضی کو جعلسازی کے ذریعہ مقامی سول جج کی عدالت سے ڈگری کروانے کے الزام میں مقدمہ کے اندراج اور مذکورہ سول جج کے خلاف محکمانہ انکوائری کا حکم دیدیا ہے تفصیلات کے مطابق ن لیگی امیدوار قومی اسمبلی بورے والا چوہدری نذیر احمد آرائیں کے کاغذات نامزدگی ریٹرننگ آفیسر ایڈیشنل سیشن جج بورے والا چوہدری خاور رشید نے اس بنا پر مسترد کر دیے تھے کہ چوہدری نذیر احمد آرائیں نے ایم بلاک بورے والا میں قائم اپنے دفتر کی سرکاری اراضی کو مبینہ طور پر سول جج کی عدالت سے ہی اپنے نام ڈگری کروالی تھی جس کا محکمہ مال کے ریکارڈ میں باقاعدہ اندراج نہیں تھا امیدوار نے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کرواتے وقت اس اثاثے کو ظاہر نہیں کیا تھا چوہدری نذیر احمد آرائیں نے اپنے کاغذات مسترد کئے جانے کے خلاف ایکشن ٹربیونل ملتا ن میں اپیل دائر کی تھی جس کی سماعت سوموار کے روز ملتان میں مکمل ہوئی ٹربیونل کے جج قاضی امین الدین خان نے فیصلہ سناتے ہوئے چوہدری نذیر احمد آرائیں کو الیکشن کے لیے نا اہل قرار دے دیا کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد سابق صوبائی وزیر و سابق ممبر قومی اسمبلی چوہدری نذیر احمد آرائیں کا سیاسی مستقبل خطرے میں پڑ گیا ہے اور مسلم لیگ ن کو اس حلقہ این اے 162کے لیے کسی مضبوط امیدوار کا انتخاب کرنا ہو گا #