سرحدوں کو لاحق خطرات کے دفاع کے لیے سعودی عرب کی مدد کریں گے، امریکا

امریکا اس طرح کی سرگرمیوں کو یمن کے بحران کو مزید گھمبیر کرنے کی سازشوں کا قرار دیتا ہے،بیان

منگل جون 11:50

سرحدوں کو لاحق خطرات کے دفاع کے لیے سعودی عرب کی مدد کریں گے، امریکا
واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) امریکا نے یمن کے حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کی جانب بیلسٹک میزائل داغے جانے کی شدید مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ سعودی عرب کو اپنی سرحدوں کے دفاع کا حق حاصل ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق امریکی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ امریکا حوثیوں کی جانب سے الریاض پر دو بیلسٹک میزائل حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے۔

(جاری ہے)

امریکا اس طرح کی سرگرمیوں کو یمن کے بحران کو مزید گھمبیر کرنے کی سازشوں کا قرار دیتا ہے۔بیان میں مزید کہا گیا کہ سعودی عرب کو اپنی سرحدوں کے دفاع کا حق ہے اور واشنگٹن کو ریاض کو اپنے دفاع میں ہر ممکن مدد فراہم کرے گا۔۔یمن میں آئینی حکومت کے قیام کے لیے سرگرم عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے بتایا کہ مقامی وقت کے مطابق شام آٹھ بج کر 39 منٹ پر حوثیوں کے دو بیلسٹک میزائل سعودی عرب کی حدود میں داخل ہوئے۔ سعودی عرب کے پیٹریاٹ سسٹم نے فوری حرکت میں آتے ہوئے بیلسٹک میزائل مار گرائے۔ یہ دونوں میزائل یمن میں حوثیوں کیگھڑ صعدہ سے داغے گئے تھے۔