(ن) لیگ کی مبینہ فارن فنڈنگ کا معاملہ انکوائری کمیٹی کے سپرد ،فریقین کو 31جولائی کو کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کی ہدایت

منگل جون 12:20

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن کی مبینہ فارن فنڈنگ کا معاملہ انکوائری کمیٹی کے سپرد کر تے ہوئے فریقین کو 31جولاء کو کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کی ہدایت کر دی ۔منگل کو الیکشن کمیشن میں مسلم لیگ ن کے خلاف فارن فنڈنگ سے متعلق درخواست کی سماعت چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی ،،تحریک انصاف کی طرف سے وکیل فیصل چوہدری الیکشن کمیشن کے سامنے پیش ہوئے، الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن کی مبینہ فارن فنڈنگ کا معاملہ انکوائری کمیٹی کے سپرد کرتے ہوئے فریقین کو 31جولاء کو کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کی ہدایت کر دی،بعد ازاں آئی این پی سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے وکیل فیصل چوہدری نے کہا کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی دونوں نے ممنوعہ فارن فنڈنگ کی مد میں الیکشن کمیشن سے غلط بیانی کی اور حقائق چھپائے ۔

(جاری ہے)

دونوں پارٹیوں نے بیرون ملک اپنی ناموں سے کمپنی رجسٹرڈ کی ہیں جس کے ذریعے غیر ملکیوں سے فنڈنگ اکٹھی کی جاتی رہی ہے حد تو یہ ہے کہ قانون کی صریحا خلاف ورزی کرتے ہوئے واجبات کے گوشوارے سربراہ کے دستخط کے بغیر جمع کروائے گئے انہوں نے کہا کہ ن لیگ زبیر گل کے زریعے غیر ملکی حکومتوں سے معاملات طے کرتی رہی ہے اس بات کی تحقیقات ہونا ضروری ہے ۔دونوں پارٹیوں کے اثاثہ جات اور ذرائع آمدن سے متعلق حقائق سامنے لانا ضروری ہے۔