شارجہ:پاکستانی بچہ سوئمنگ پُول میں ڈُوب کر جاں بحق

واقعہ المجاز کے علاقے میں واقع رہائشی بلڈنگ میں موجود ایک سوئمنگ پول میں پیش آیا

Muhammad Irfan محمد عرفان منگل جون 13:24

شارجہ:پاکستانی بچہ سوئمنگ پُول میں ڈُوب کر جاں بحق
شارجہ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔26جُون 2018ء) شارجہ پولیس کے مطابق ایک آٹھ سالہ پاکستانی بچہ المجاز کے علاقے میں واقع ایک رہائشی عمارت میں موجود سوئمنگ پول میں ڈُوب کرجان کی بازی ہار گیا۔ پولیس کے مطابق جاں بحق بچے کی فیملی عمارت کی ساتویں منزل پر بنے ایک فلیٹ پر مقیم تھی۔ بچہ اپنے والدین کو بتائے بغیر عمارت کی تیسری منزل پر موجود سوئمنگ پول چلا گیا۔

پولیس آپریشن روم کو رات آٹھ بجے بچے کے ڈُوبنے کی اطلاع مِلی۔ ڈُوبنے والے بچے کو سوئمنگ پول سے نکال کر اُس کا سانس بحال کرنے کی کوشش کی گئی جس کے بعد اُسے قریب واقع القسیمی ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُس کی موت کا اعلان کر دیا ۔ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے فارنزک لیبارٹری بھیج دیا گیا جبکہ ال بُحیرہ پولیس اسٹیشن اس واقعے کی تفتیش کر رہی ہے۔

(جاری ہے)

پولیس نے اس واقعے میں والدین کی غفلت کو جانچنے کے لیے اُنہیں پولیس اسٹیشن طلب کر لیا ہے۔ پولیس کے مطابق والدین کی جانب سے غفلت کے ایسے کیسز کی صورت میں اُنہیں قانونی کارروائی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ جب کہ دُبئی پولیس نے والدین کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنے بچوں کی پُوری نگرانی کریں۔ کیونکہ اس سے پہلے یکم جُون کو دُبئی میں بھی دو بچیاں ایک سوئمنگ پُول میں ڈُوب کر ہلاک ہو گئی تھیں۔

ان دو اماراتی بچیوں ڈیڑھ سالہ سُعاد اور اس کی ڈھائی سالہ کزن شیہاب کی ہلاکت گھر میں موجود سوئمنگ پُول میں ڈُوبنے سے ہوئی تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ والدین کو چھوٹے بچوں کو کبھی اکیلا نہیں چھوڑنا چاہیے۔ شارجہ کے سوشل سروسز ڈیپارٹمنٹ کو والدین کی غفلت‘ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے حوالے سے بڑی تعداد میں اطلاعات موصول ہوتی ہیں۔ پولیس کے مطابق بچوں کی گمشدگی‘ ڈُوب کر ہلاک ہونے اور اُونچائی سے گرنے کے واقعات سراسر والدین کی غفلت کا نتیجہ ہیں جو اپنے بچوں کا دھیان نہیں رکھتے۔

متعلقہ عنوان :