پولینڈ ، اجتماع کا حق شدید خطرات سے دو چار، ایمنسٹی انٹرنیشنل کی تنبیہہ

وارسا حکومت عدلیہ کی آزادی کو محدود کرنے کی کوشش میں مصروف، یورپی یونین

منگل جون 14:21

وارسوا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) انسانی حقوق کے بین الاقوامی گروپ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے متنبہ کیا ہے پولینڈ میں اجتماع کا حق شدید خطرات سے دو چار ہے، وارسا حکومت عدلیہ کی آزادی کو محدود کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق انسانی حقوق کے بین الاقوامی گروپ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے متنبہ کیا ہے کہ یورپی ملک پولینڈ میں اجتماع کا حق خطرے میں ہے۔

(جاری ہے)

اپنی ایک رپورٹ میں ایمنسٹی کی طرف سے کہا گیا ہے کہ پابندیوں پر مبنی قانون سازی کے ساتھ پولیس کے سخت رویے، ہراساں کیے جانے اور قانونی کارروائیوں کے سبب پولینڈ میں پر امن احتجاج کا حق خطرات کا شکار ہے۔ ایمنسٹی کے مطابق پر امن احتجاج ایک حق ہے، مگر پولینڈ میں اسے شدید خطرات لاحق ہیں۔ دوسری طرف یورپی یونین بھی اس حوالے سے تحقیقات کی ہے کہ آیا وارسا حکومت عدلیہ کی آزادی کو محدود کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔