افغانستان؛طالبان نے جنگ بندی کا مطالبہ پھر مسترد کر دیا

ہم اس بارے امریکی حمایت یافتہ مہموں کا حصہ نہ بنیں گئیں،امریکی اور دیگر ممالک صرف یہ چاہتے ہیں کہ ہم ہتھیار ڈال کر ان کے منظور شدہ نظام سے سمجھوتہ کر لیں،ترجمان طالبان ذبیع اللہ

منگل جون 15:33

کابل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) افغان طالبان نے ملکی عمائدین اور رضاکاروں کی جانب سے جنگ بندی کی اپیلیں مسترد کر دیں ہیں۔منگل کو ترجمان طالبان ذبیع اللہ مجاہد نے اپنے ایک بیان میں سول سوسائٹی کے افراد اور امن کیلئے سرگرم رضاکاروں سے کہا کہ وہ اس حوالے سے امریکی حمایت یافتہ مہموں کا حصہ نہ بنیں،امریکی اور دیگر ممالک کی افواج صرف یہ چاہتی ہیں کہ طالبان ہتھیار ڈال دیں اور ان ممالک کے منظور شدہ نظام سے سمجھوتہ کر لیں۔

(جاری ہے)

افغانستان میں عیدالفطر کے موقع پر حکومت اور طالبان کی جانب سے عارضی جنگ بندی کے بعد سے ملک بھر سے دوبارہ جنگ بندی اور امن مذاکرات کے مطالبات سننے میں آ رہے ہیں۔گزشتہ اختتام ہفتہ پر بھی جانی خیل میں افغان قبائلی رہنماؤں نے ایک اجتماع میں حکومت اور طالبان سے جنگ بندی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔