حکومت پنجاب کی زرعی اراضی کے تجارتی استعمال کی اجازت دینے سے قبل قانونی تقاضوں کو مد نظر رکھنے کی ہدایت

منگل جون 15:51

فیصل آباد۔26 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) حکومت پنجاب نے صوبہ بھر کے ٹائون پلاننگ ، کمرشلائزیشن اور بلڈنگ بائی لاز پر عملدرآمد کے ذمہ دار ضلعی افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ زرعی اراضی اور رہائشی جگہوں کے تجارتی مقاصد کیلئے استعمال کی اجازت دینے سے قبل تمام ترقانونی تقاضوں کو مد نظر رکھیں نیز اس سلسلہ میں خصوصی کمیٹیاں بھی تشکیل دینے کی ہدایت کی گئی ہے جو کمرشلائزیشن سے پہلے ہر کیس کا تفصیلی سروے کر کے اس حوالے سے حتمی فیصلہ کریں گی۔

(جاری ہے)

دریں اثناء فیصل آباد ڈویژنل انتظامیہ کے ذرائع نے بتایاکہ فیصل آباد میں جن شاہرات کو کمرشلائزڈ قرار دیا گیا ہے ان پر اس نوعیت کی تجارتی سرگرمیوں کی اجازت نہیں ہوگی جن سے ٹریفک کے بہائو میں رکاوٹ آئے یا دیگر سماجی مسائل پیدا ہوں۔انہوں نے کہاکہ شہر میں زیر تعمیر بلند وبالا عمارتوں کے تعمیراتی ڈیزائن میں بد نیتی سے بلڈنگ بائی لاز کی خلاف ورزی کی صورت میں تعمیراتی کام فوری طور پر روک دیا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ کنورشن فیس کی وصولی کیلئے قطعہ اراضی کی قیمت کی تشخیص ہر لحاظ سے شفاف انداز میں ہوگی ۔․

متعلقہ عنوان :