مظفر گڑھ کے با شعورووٹر نے پانچ سال بعد حلقے میں جانے والے پی ٹی آئی رہنما سے انوکھا حلف لینے کا مطالبہ کر دیا

پانچ سال آپ ہمیں نظر نہیں آئے لیکن اب وعدہ کریں الیکشن جیتنے کے بعد ہر ماہ حلقے میں آئیں گے، شہری کا پی ٹی آئی رہنما عاشق گوپانگ سے مطالبہ

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان منگل جون 16:22

مظفر گڑھ (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔26 جون 2018ء) مظفر گڑھ کے با شعورووٹر نے پانچ سال بعد حلقے میں جانے والے پی ٹی آئی رہنما سے انوکھا حلف لینے کا مطالبہ کر دیا ۔تفصیلات کے مطابق جسیے جیسے الیکشن کا وقت قریب آ رہا ہے تو سیاسی رہنماؤں نے بھی انتخابات میں جیت کے لیے اپنی کوششیں تیز کر دیں ہیں۔ پانچ سال حلقے کا منہ نہ دیکھنے والے سیاسی رہنماؤں نے بھی اب اپنے حلقوں میں جانا شروع کر دیا ہے اور عوام سے رابطہ شروع کر دیا ہے تاہم لوگوں میں بھی اب سیاسی شعور پیداہو گیا ہے۔

اور وہ اپنے سیاسی رہنماؤں سے یہ سوال کرنے لگ گئے ہیں کہ پانچ سال ہمارا خیال نہیں آیا اب ووٹ مانگنے کیوں آئے ہیں۔ایسا ہی ایک واقعہ مظفر گڑھ پیش آیا جہاں پاکستان مسلم لیگ ن سے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرنے والے عاشق گوپانگ کو الیکشن مہم کرنا مہنگی پڑ گئی۔

(جاری ہے)

ایک ووٹر نے سب کے سامنے عاشق گوپانگ کو کھری کھری سنا دیں اور کہا کہ مجھے آپ پچھلے پانچ سال میں حلقے میں نظر نہیں آئے۔

اب آپ ہمیں حلف دے کر جائیں گے الیکشن جیتنے کی صورت میں آپ ہر ماہ ایک بار حلقہ کا دورہ کریں گے۔ووٹر کا کہنا تھا کہ ہمیں یہاں ہر کسی نے دھوکہ دیا ہے ۔ہم اب بھی نہیں جاگیں گے تو کب جاگیں گے۔ہر سیاسی رہنما بڑے بڑے وعدہ کرتا ہے لیکن پھر کچھ بھی نہیں کرتا اور پانچ سال بعد پھر آ جاتے ہیں کہ ہمیں ووٹ دو۔لیکن کمان ووٹر کی ہوتی ہے ۔اس لیے ہمیں عاشق گوپانگ یہ حلف دے کر جائیں کہ وہ مہینے میں ایک چکر لگائیں گے جس دوران وہ شہریوں کے مسائل سنیں گے۔

اس سے پہلے سابق وزیر اعظم شاید خاقان عباسی کو بھی کہوٹہ میں لوگوں نے گھیر لیا تھا اور پانچ سال کی کارگردگی کا حساب مانگا تھا۔ جب کہ سکندر بوسن کو بھی ملتان میں ایسی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔واضح رہے ملک بھر میں عام انتخابات کا اعلان 25جولائی کو کیا گیا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ یہ انتخابات ملکی تاریخ کے مہنگے ترین انتخابا ت ہو گے۔ویڈیو ملاحظہ کیجئے: