بھارت، نیتا حضرات ہوشیار باش، ووٹ مانگنے پر استقبال جوتوں کے ہار سے کیا جائیگا

نیتائوں کی سرد مہری اور وعدے وفا نہ کرنے پر یہ انوکھا فیصلہ کیا گیا، سیاستدان صرف ووٹ کے لئے آتے ہیں بعد میں عوام کی کوئی فکر نہیں کرتے، عوام کا فیصلہ

منگل جون 19:09

بھوپال(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں سیاستدانوں کا استقبال جوتوں کے ہار سے کیا جائے گا، نیتائوں کی سرد مہری اور وعدے وفا نہ کرنے پر بھوپال کی عوام نے یہ انوکھا فیصلہ کیا، سیاستدان صرف ووٹ کے لئے آتے ہیں بعد میں عوام کی کوئی فکر نہیں کرتے،،ووٹ مانگنے پر ان کا استقبال جوتوں کے ہار سے کیا جائیگا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق عموما مقامی رہنماوں کے استقبال کیلئے علاقے کے لوگوں کو پھول نچھاور کرتے ہوئے دیکھا گیا لیکن چپلوں کے ہار سے نیتائوں کا استقبال کرنا شاید ہی سنا ہوگا۔

مدھیہ پردیش کے بھوپال میں کولار علاقے کے اوم نگر میں نیتاوں کے استقبال کیلئے لوگوں نے جوتوں کا ہار تیار کیا۔ دراصل مانسون سے قبل شہریوں کی سہولتوں کیلئے سیاسی پارٹیوں کے رہنماوں نے بڑے بڑے وعدے کئے تھے مگر ان نیتاوں کی سردمہری اور وعدہ وفا نہ کرنے پر علاقے کے لوگوں نے پرانے جوتوں سے ہار تیار کرکے گھروں کی چھت پر لٹکا دیا گیا۔

(جاری ہے)

مقامی تاجر راجیش مشرا نے بتایا کہ ابھی صرف ہلکی پھلکی بارش سے علاقے کا حال برا ہوگیا ہے۔

انہوں نے بھوپال میونسپل کارپوریشن اور نیتاوں کو مورد الزام ٹھہراتے ہوئے کہا کہ پارٹی رہنما صرف الیکشن کے زمانے میں یہاں آتے ہیں اور ووٹ مانگ کر چلے جاتے ہیں اور علاقے کی ترقی کیلئے کوئی قدم نہیں اٹھاتے۔ علاقے میں رہنے والے گنیش بگھیل نے کہا کہ سوسائٹی میں پینے کے پانی کی شدید قلت ہے ۔سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ، جگہ جگہ گڑھے پڑ چکے ہیں ۔ ہم نے میونسپلٹی کے اہلکاروں اور افسران سے شکایتیں کیں ، وارڈ ممبران سے بات چیت کی مگر ان کے کان پر جوں تک نہیں رینگی۔ اس کے بعد علاقے کے لوگوں نے بطور احتجاج جوتوں کا ہار تیار کررکھا ہے جیسے ہی کوئی نیتا ، لیڈر یا پارٹی رہنما ووٹ مانگنے آئیں گے ان کا استقبال انہی جوتوں کے ہار سے کیا جائیگا۔