چین پرامن بقائے باہمی کے اصولوں پر سختی سے کاربند ہے، چین منصفانہ گلوبل آرڈر، آزادی اور عدم مداخلت پر یقین رکھتا ہے، پروفیسر جن کانرونگ

منگل جون 19:48

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) رنمین یونیورسٹی چین میں سکول آف انٹرنشینل سٹڈیز ایسوسی ایٹ ڈین اور پروفیسر جن کانرونگ نے کہا ہے کہ چین پرامن بقائے باہمی کے اصولوں پر سختی سے کاربند ہے، چین منصفانہ گلوبل آرڈر، آزادی اور عدم مداخلت پر یقین رکھتا ہے۔ یہ بات انہوں نے منگل کو انسٹی ٹیوٹ آف سٹرٹیجک سٹڈیز کے زیر اہتمام ’’کمیونسٹ پارٹی چین کی 19ویں نیشنل کانگرس کے بعد چین کی خارجہ پالیسی21ویں صدی میں چین کا کردار‘‘ کے موضوع پر عوامی مذاکرے کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہی۔

پروفیسر جن کانرونگ اس موقع پر مہمان خصوصی تھے۔ چیئرمین آئی ایس ایس آئی سابق سفیر خالد محمود نے اپنے افتتاحی کلمات میں کہا کہ چین عالمی سطح پر انتہائی ذمہ دارانہ کردار ادا کر رہا ہے۔

(جاری ہے)

چینی خارجہ پالیسی گلوبل دنیا میں ان کے متوازن کردار کی عکاس ہے۔ پروفیسر جن کانرونگ میں کہا کہ چین علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر اپنی خود مختاری اور علاقائی مفادات کو مدنظر رکھتے ہوئے جدیدیت اور سیاسی استحکام کی پالیسی پر عملدرآمد کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین پرامن بقائے باہمی کے اصولوں پر سختی سے کاربند ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین کے عظیم انقلاب کا کردار، اصلاحات، اوپن ڈور پالیسی اور انسانی تاریخ میں سب سے بڑی مینوفیکچرنگ صنعت چین کی اہم کامیابیاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک سڑک ایک پٹی اور ایشیاء پیسفک کا فری ٹریڈ ایریا نئی سٹرٹیجی ہیں جو چین نے اختیار کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین منصفانہ گلوبل آرڈر، آزادی اور عدم مداخلت پر یقین رکھتا ہے۔

متعلقہ عنوان :