عمران خان نے تحریک انصاف میں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی گروپنگ کا اعتراف کر لیا

گروپنگ ختم کرنے کیلئے حل بھی بتا دیا، حکومت میں آئے تو دونوں رہنماوں کے گروپس خود ہی ختم ہو جائیں گے: سربراہ تحریک انصاف

muhammad ali محمد علی منگل جون 19:30

عمران خان نے تحریک انصاف میں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی گروپنگ ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) عمران خان نے تحریک انصاف میں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی گروپنگ کا اعتراف کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے آئندہ انتخابات کیلئے بھرپور طریقے سے تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ تاہم اس سلسلے میں ٹکٹوں کی تقسیم کے عمل کو لے کر پارٹی اندرونی طور پر شدید اختلافات کا شکار بھی ہو گئی ہے۔

اگلے ماہ شیڈول عام انتخابات کیلئے ٹکٹوں کی تقسیم کا عمل شروع کیے جانے کے بعد تحریک انصاف کو اندرونی طور پر شدید محاذ آرائی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ تحریک انصاف گزشتہ کچھ دنوں کے دوران شدید گروپ بندی کا شکار ہوئی ہے۔ خاص کر پارٹی کے 2 سینئر ترین رہنما شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کے درمیان اختلافات مزید شدت اختیار کر گئے۔

(جاری ہے)

دونوں رہنماوں کی جانب سے اپنے حمایت یافتہ امیدواروں کو ٹکٹ دلوانے کیلئے بھرپور کوشش کی جا رہی ہے۔

اسی باعث کئی حلقوں میں ٹکٹوں کی تقسیم کو لے کر دونوں رہنماوں میں شدید نوک جھونک بھی ہوئی ہے۔ معاملہ یہاں تک جا پہنچا کہ شاہ محمود قریشی نے میڈیا پر آ کر جہانگیر ترین کو تنقید کا نشانہ بنا دیا۔ شاہ محمود قریشی نے یہاں تک کہہ دیا کہ چونکہ جہانگیر ترین اب انتخابی سیاست کیلئے نااہل ہیں، اس لیے ان کیساتھ کوئی مقابلہ نہیں ہے۔ دوسری جانب جہانگیر ترین نے بھی شاہ محمود قریشی کو بھرپور جواب دیتے ہوئے پارٹی کے اندرونی معاملات کو میڈیا پر نہ لانے کی تلقین کی۔

اس تمام صورتحال نے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کو خاصا پریشان کیا ہے۔ اس حوالے سے اب عمران خان نے پہلی مرتبہ باضابطہ ردعمل دیا ہے۔ عمران خان نے اعتراف کیا ہے کہ تحریک انصاف میں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی گروپنگ موجود ہے۔ عمران خان کا مزید کہنا ہے کہ یہ گروپنگ جلد ختم ہو جائے گی۔ تحریک انصاف جیسے ہی حکومت میں آئے گی تو دونوں رہنماوں کے گروپس خود ہی ختم ہو جائیں گے۔