نگران صوبائی کابینہ کا اجلاس،4ماہ کے بجٹ کی منظوری،تنخواہوں اورپنشن میں10فیصد اضافہ

نگران کابینہ نے نئے مالی سال 2018-19کے 4ماہ کے ترقیاتی بجٹ کی بھی منظور ی دی نئے مالی سال 2018-19 کے 4 ماہ کے جاریہ اخراجات کے تخمینہ جات کی منظوری دی گئی تعلیم،صحت ،زراعت اورسماجی شعبوں کیلئے فنڈز میں اضافہ،پنجاب ریونیواتھارٹی کی کا رکردگی کو سراہا گیا محدود مینڈیٹ اور آئینی ذمہ داری کے اندر رہتے ہوئے بجٹ میں عوام کو ریلیف دینے کی کوشش کی ہے نگران وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر حسن عسکری

منگل جون 20:46

نگران صوبائی کابینہ کا اجلاس،4ماہ کے بجٹ کی منظوری،تنخواہوں اورپنشن ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) نگران وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر حسن عسکری کی زیرصدارت منگل کو صوبائی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا۔وزیراعلیٰ آفس میں منعقدہ اجلاس میں نئے مالی سال 2018-19 کی4 ماہ کے بجٹ کی منظوری دے دی گئی۔اجلاس کے دوران سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں10فیصد اضافے کی تجویزکو منظور کیاگیا اور ہاؤس رینٹ میں نظر ثانی کی بھی منظوری دی گئی۔

اجلاس میں ریٹائرڈ سرکاری ملازمین کی پنشن میں بھی 10فیصد اضافے کی منظوری دی گئی۔ نگران کابینہ نے نئے مالی سال 2018-19کے 4ماہ کے ترقیاتی بجٹ کی بھی منظور ی دی۔ اجلاس میں نئے مالی سال 2018-19 کے 4 ماہ کے جاریہ اخراجات کے تخمینہ جات کی منظوری دی گئی۔نگران وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر حسن عسکری نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نگران حکومت نے نئے مالی سال برائے 2018-19کیلئے 4 ماہ کا بجٹ پیش کیا ہے اور ہم نے آئینی تقاضوں کو مدنظر رکھ کر بجٹ پیش کیا ہے۔

(جاری ہے)

ہم نے اپنے محدود مینڈیٹ اور آئینی ذمہ داری کے اندر رہتے ہوئے بجٹ میں عوام کو ریلیف دینے کی کوشش کی ہے۔تعلیم،صحت ،زراعت اورسماجی شعبوں کیلئے فنڈز میں اضافہ کیاگیاہے ۔ ہم نے اپنے مینڈیٹ میںرہ کر صوبے کے عوام کی خدمت کرنی ہے ۔۔ڈاکٹر حسن عسکری نے کہا کہ تمام فیصلے کابینہ کی مشاورت سے کیے جارہے ہیںاورآج اتفاق رائے سے بجٹ منظور کیاگیا۔اجلاس میں پنجاب ریونیواتھارٹی کی کا رکردگی کو سراہا گیا۔قبل ازیں سیکرٹری خزانہ نے نئے مالی سال کے بجٹ کے اہم خدوخال کے حوالے سے بریفنگ دی ۔اجلاس میں صوبائی وزراء ،چیف سیکرٹری ،انسپکٹر جنرل پولیس اوراعلی حکام نے شرکت کی۔