پیپلزپارٹی کے ساتھ کوئی سیٹ ایڈجسٹمنٹ یا الائنس نہیں ہو رہا ،اداروں میں چند افراد ایسے ہیں جو آنے والے الیکشن میں اپنی مرضی کے لوگ آگے لانا چاہتے ہیں ، جان بوجھ کر الیکشن کو متنازع بنایا جا رہاہے ، سیاستدان کرپشن کی فائلوں پر بلیک میل ہوتے ہیں ، اپنے حلقے کے الیکشن رزلٹ کو فکس نہیں ہونے دوں گا

سنی اتحاد کونسل کے سربراہ صاحبزادہ حامد رضا کا پریس کانفرنس سے خطاب

منگل جون 20:52

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) سنی اتحاد کونسل کے سربراہ صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے ساتھ کوئی سیٹ ایڈجسٹمنٹ یا الائنس نہیں ہو رہا ،اداروں میں چند افراد ایسے ہیں جو آنے والے الیکشن میں اپنی مرضی کے لوگ آگے لانا چاہتے ہیں ، جان بوجھ کر الیکشن کو متنازع بنایا جا رہاہے ، سیاستدان کرپشن کی فائلوں پر بلیک میل ہوتے ہیں ، میر ی کوئی فائل نہیں جو مجھے بلیک میل کر سکے ، اپنے حلقے کے الیکشن رزلٹ کو فکس نہیں ہونے دوں گا ، فکس کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز حساس اداروں کے کچھ لوگوں نے طاقت کے بل بوتے پر مجھے حبس بے جا میں رکھا حالانکہ ریاستی اداروں نے اپنے آپ کو سیاست سے الگ رکھا ہوا ہے لیکن چند افراد الیکشن میں اپنی مرضی کے لوگوں کو آگے لانے کی کوشش کر رہے ہیں جس کے تمام ثبوت موجود ہیں ، اس وقت اکیلا پریس کانفرنس کر رہا ہوں ،اگر نوبت زیادہ خراب ہوئی تو کچھ بھی ثبوت پیش کردوں گا ۔

(جاری ہے)

صاحبزادہ حامد رضا نے انکشاف کیا کہ پی ٹی آئی کے ساتھ الیکشن سے پہلے ہی ہاتھ ہو چکا ہے جو انہیں 25جولائی کو معلوم ہو جائے گا ، پی ٹی آئی کے بہت سے ارکان مسلم لیگ نون کے ساتھ بیک ڈور رابطوں میں ہیں ، مجھے تین مرتبہ جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی لیکن میں الیکشن میں بھرپور حصہ لوں گا ، مجھے معلوم ہے وزیراعلیٰ پنجاب اور متوقع وزیراعظم کون ہوں گے اور یہ کن حلقوں سے منتخب ہوں گے ، میں دھرنا اسلام آباد یا لاہور نہیں دوں گا بلکہ راولپنڈی میں دوں گا ۔

حاضر سروس برگیڈئر عادل میرے حلقہ انتخاب پر اثر انداز ہو رہے ہیں اگر سلسلہ نہ رکا تو اس سے اوپر والے رینکوں کے نام بھی بتا دوں گا ۔ حلقہ این اے 110سے ہر حالت میں الیکشن لڑوں گا جبکہ 106سے الیکشن لڑنے کا فیصلہ آئندہ چند روز میں کیا جائے گا ۔