اپلیٹ ٹربیونل اسلام آباد میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات نامزدگی کیخلاف ایک اور درخواست دائر

منگل جون 21:33

اپلیٹ ٹربیونل اسلام آباد میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) اپلیٹ ٹربیونل اسلام آباد میں گزشتہ روز چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات نامزدگی کیخلاف ایک اور درخواست دائر کی گئی،کیس کی سماعت جسٹس محسن اختر کیانی نے کی۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے 2013کے کاغذات نامزدگی میں حقائق چھپائے، اثاثے چھپانے پرعمران خان صادق اور امین نہیں رہے۔

جس پر عدالت نے معاملے پر معاونت کیلئے ایف بی آر ٹیکس حکام کو نوٹس جاری کردیا ۔

(جاری ہے)

عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے کہا کہ درخواست گزار غلط بیانی کر رہے ہیں، اس کی قانون میں الگ سزا موجود ہے،درخواست گزار نے اپنی درخواست میں لکھا کہ وہ این اے 53 کا ووٹر ہے،،عدالت کے پوچھنے پر درخواست گزار نے کہا کہ وہ این اے 54 کا ووٹر ہے، ایٹم بم پکوڑے بنانے کیلئے نہیں ہوتا، ملک پر کوئی برا وقت آجائے تو ایٹم بم استعمال کیا جانا چاہیے۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ ہوسکتا ہے جمع تفریق میں کوئی غلطی ہوگئی ہو۔جس پر درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ اس لیول ہر بھی غلطی ہو تو کیا کہہ سکتے ہیں،،عمران خان ملک کے اگلے وزیراعظم ہوسکتے ہیں،ایسے تو وہ ایٹم بم کا بٹن دبا دیں تو ۔کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی۔