قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے نیب ہیڈ کوارٹر کو بارود سے اڑانے کی دھمکی کا نوٹس لے لیا

وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب، نیب اور اس کے تفتیشی افسران کو سخت سکیورٹی دینے کے احکامات جاری کردیئے

منگل جون 23:10

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے نیب ہیڈ کوارٹرز کو بارود سے اڑانے کی دھمکی کا نوٹس لے لیا ، وزارت داخلہ سے معاملے کی رپورٹ طلب کرلی،نیب ہیڈکواٹرز اور تفتیش کرنے والے آفیسرز کو سخت سیکورٹی دینے کے احکامات بھی جاری کردیئے۔تفصیلات کے مطابق چیئرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے نیب ہیڈ کوارٹرز کو بارود سے اڑانے کی دھمکی کا نوٹس لیتے ہوئے وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب کرلی ہے اور احکامات جاری کیے ہیں کہ نیب ہیڈکواٹرز اور تفتیش کرنے والے آفیسرز کو سخت سیکورٹی دی جائے ۔

رحمن ملک کا کہنا تھا کہ نیب کو بارود سے اڑانے کی دھمکی نہایت ہی قابل مذمت و تشویش ناک ہے اوروزارت داخلہ نیب کو دھمکی اور سیکورٹی انتظامات پر تین دنوں میں کمیٹی کو رپورٹ جمع کریں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ وزارت داخلہ آنے والے اجلاس میں قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کو نیب کو دھمکی پر بریف کرے اورتفتیش کرکے دھمکیاں دینے والوں کو قرار واقعی سزا دی جائے،قائمہ کمیٹی برائے داخلہ ایک ذیلی کمیٹی تشکیل دئیگی جو معاملے کی تفتیش کی نگرانی کریگی۔ سینیٹر رحمان ملک نے ہدایت کی کہ وزارت داخلہ فوری طور پر نیب ہیڈکواٹرز کی سیکورٹی بڑھا دے،وہ آفیسرز جو ہائی پروفائل کیسوں کی تفتیش کر رہے ہیں کی سیکورٹی سخت کی جائے۔