کراچی آیا ہوں اور اب کراچی کو لاہوراور سندھ کو پنجاب کی طرح ترقی یافتہ بناؤں گا، ایک سے زائد نشستوں پر کامیابی کی صورت میں کراچی کی نشست کو ہی بر قرار رکھوں گا، کراچی کے امن کا کریڈٹ نواز شریف اور رینجرز کو جاتا ہے، ملکی معاشی حب کراچی اب پر امن ہو گیا ہے

مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کا کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب

منگل جون 23:19

کراچی آیا ہوں اور اب کراچی کو لاہوراور سندھ کو پنجاب کی طرح ترقی یافتہ ..
کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) مسلم لیگ ( ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ کراچی کی ترقی میرا وژن ہے، الیکشن شفاف ہونے چاہیے، الیکشن جیت کر سندھ میں مخلوط حکومت بنا سکتے ہیں، کراچی آیا ہوں اور اب کراچی کو لاہوراور سندھ کو پنجاب کی طرح ترقی یافتہ بناؤں گا، ایک سے زائد نشستوں پر کامیابی کی صورت میں کراچی کی نشست کو ہی بر قرار رکھوں گا، کراچی کے امن کا کریڈٹ نواز شریف اور رینجرز کو جاتا ہے، ملکی معاشی حب کراچی اب پر امن ہو گیا ہے ، صفائی اور دیگر سہولیات کی فراہمی کی ضرورت ہے، الیکشن شفاف ہونے چاہیے، صاف پانی کی فراہمی کے منصوبے میں کرپشن کا کیس نیب نے نہیں ہم نے پکڑا تھا جس میں 70 ارب روپے کی کرپشن ہو رہی تھی، پیر صاحب پگارا ہمارے محترم اور بھائی ہیں جب بھی حکم کریں گے ان کی دعوت پر حاضر ہو جاؤں گا۔

(جاری ہے)

ان خیا لات کا اظہار انہوں نے منگل کو مقامی ہوٹل میں پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر (ن) لیگ کے رہنماء سینیٹر مشاہد حسین سید، سینیٹر مشاہد اللہ خان، صوبائی صدر شاہ محمد شاہ، سینیٹر سلیم ضیا، صوبائی سیکر یٹری اطلاعات خواجہ طارق نذیر، کراچی کے صدر علی اکبر گجر اور دیگر بھی موجود تھے۔ ایک سوال کے جواب میں شہباز شریف نے کہا کہ میں کسی خلائی مخلوق کو نہیں جانتا ۔

محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ وہ کراچی کے لوگوں کو خواب دکھانے نہیں بلکہ کراچی کو ترقی یافتہ شہر بنانے کا عزم لے کرآّئے ہیں۔ شہباز شریف نے کہا کہ مسلم لیگ(ن)کی سابقہ حکومت نے کراچی کو امن کا گہوارہ بنایا اب یہاں پر ماڈل پبلک ٹرانسپورٹ دینے اور روشنیاں بحال کرنے کا وقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کراچی کی شہریوں کے والہانہ استقبال کرنے پر شکر گزار ہیں، بزنس کمیونٹی نے بھی ان کے دورے کو بہت سراہا ہے انکا بھی شکر گزار ہوں۔

انہوں نے کہا کہ تین سال میں پینے کا صاف پانی گھر گھر پہنچادیا جائے گا،ہم اس شہر کے باسیوں سے جو بھی وعدے کررہے ہیں وہ ضرور پورے کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ نیب کے سامنے پیش ہوتے رہے ہیںپارٹی کا صدر ہوں کراچی میں مصروف تھا جسکی وجہ سے پیش نہ ہوسکا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ صاف پانی اسکنڈل ہم نے پکڑا تھا اس حوالے سے نیب آج جو کچھ بتا رہا ہے یہ تحقیقات ہم نے کی تھی۔

جی ڈی اے کے سربراہ پیر صاحب پگارا سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ پیر صاحب جب ملنے کا کہیں گے ملاقات کے لئے حاضر ہوجائینگے مانی وانی بھی کھائیں گے۔انہوں نے کہا کہ کراچی والوں کا شکر گزار ہوں کہ انہوں نے اتنی محبت دی،،کراچی سے انتخابی.مہم.شروع کرنے کا فیصلہ سوچ سمجھ کر کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کسی کے الزامات کا جواب نہیں دونگا۔ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ کراچی میں ہمارے پاس حکومت نہیں تھی، ہمیں پنجاب میں لوگوں نے مینڈیٹ دیا اور ہم سے پنجاب کے بارے میں پوچھا جائے ، میں دعوت دیتا ہوں کہ پنجاب اور دیگر صوبوں کی کارکردگی کا جائزہ لیکر فیصلہ کریں ۔