مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ نےاستعفا دے دیا

نگراں وزیراعظم ناصرالملک نے ناصرخان جنجوعہ کااستعفا منظور کرلیا ہے، میڈیا رپورٹ

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ جون 12:02

مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ نےاستعفا دے دیا
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔27جون 2018ء) مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ نےاستعفا دےدیا۔ترجمان نیشنل سیکورٹی کے مطابق مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ نےاستعفا دےدیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ناصرخان جنجوعہ کو مسلم لیگ ن کی حکومت نے مشیر قومی سلامتی مقررکیاتھا۔تاہم آج مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ نے اپنا استعفا پیش کر دیا ہے۔

ناصرخان جنجوعہ کے استعفا دینے کی ابھی تک وجوہات سامنے نہیں آ سکیں۔ جب کہ نگراں وزیراعظم ناصرالملک نےناصرخان جنجوعہ کااستعفا منظور کرلیا ہے۔ناصر خان جنجوعہ نے گزشتہ رات اپنا استعفا نگران وزیر اعظم کو بھجوایا تھا۔یاد رہے اس پہلے اٹارنی جنرل اشتر اوصاف اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے تھے۔اشتر اوصاف کو 29 مارچ 2016 میں اٹارنی جنرل آف پاکستان کا عہدہ سونپا گیا تھا۔

(جاری ہے)

جس کے بعد اشترا اوصاف جون 2018میں مستعفی ہو گئے تھے۔اٹارنی جنرل اشتر اوصاف نے کہا تھا کہ میں عام انتخابات کے تناظر میں اپنے عہدے سے مستعفی ہو رہا ہوں۔ اشتراوصاف نے کہاکہ میں نے موجودہ سیاسی صورتحال کے پیش نظر استعفے کا فیصلہ کیا۔ اس سے قبل کہ کوئی سیاسی جماعت انتخابات پر اثرانداز ہونے کا اعتراض اُٹھاتی، کسی سیاسی جماعت کے اعتراض سے قبل ہی میں نے یہ اقدام اُٹھایا۔

جمہوریت کی مضبوطی اور منتقلی آئین کا اہم جزو ہے۔ میں نہیں چاہتا کہ میری موجودگی کی وجہ سے انتخابات میں شفافیت پر سوال اُٹھایا جائے۔ شفاف انتخابات میں رکاوٹ کا تاثر دور کرنے اورانتخابات کی شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے مستعفی ہوا ہوں۔جب کہ معروف صحافی رؤف کلاسرا نے دعوی کیا تھا کہ اشتر اوصاف پر ایک کیس بھی چلتا رہا تھا ۔