(ن) لیگ کا امیدواروں کی گرفتاری کا معاملہ چیف الیکشن کمشنر کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

پارٹی چیئرمین راجا ظفرالحق کی قیادت میں 4 رکنی وفد چیف الیکشن کمشنر سردار رضا سے ملاقات کریگا امیدواروں کی گرفتاریوں کے سلسلے کو قبل از انتخابات دھاندلی قرار دیتے ہوئے گرفتاری فوری بند کرنے کا مطالبہ

بدھ جون 14:08

(ن) لیگ کا امیدواروں کی گرفتاری کا معاملہ چیف الیکشن کمشنر کے سامنے ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) نے پارٹی امیدواروں کی گرفتاری کا معاملہ چیف الیکشن کمشنر کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ کرلیا۔قومی احتساب بیورو((نیب )) نے گزشتہ روز قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 59 سے چوہدری نثار کے مد مقابل مسلم لیگ (ن) کے امیدوار قمرالاسلام کو گرفتار کیا جنہیں صاف پانی کمپنی کے اسکینڈل میں 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پرنیب کے حوالے کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

مسلم لیگ (ن)کے قائد میاں نوازشریف نے گزشتہ روز پارٹی رہنماؤں کو نیب کی کارروائیوں کیخلاف احتجاج کی ہدایت کی تھی۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) نے اس حوالے سے لائحہ عمل تیار کرلیا ہے جس کے تحت پارٹی چیئرمین راجا ظفرالحق کی قیادت میں 4 رکنی وفد چیف الیکشن کمشنر سردار رضا سے ملاقات کریگا۔(ن) لیگ کے وفد میں مشاہد حسین سید، احسن اقبال اور زاہد حامل شامل ہوں گے ،ْ وفد چیف الیکشن کے سامنے اپنے امیدواروں کی گرفتاری کا معاملہ اٹھائے گا۔مسلم لیگ (ن) نے امیدواروں کی گرفتاریوں کے سلسلے کو قبل از انتخابات دھاندلی قرار دیتے ہوئے گرفتاری فوری بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔