امریکا،بچوں کو دو ہفتوں کے اندر والدین کے سپرد کرنے کا حکم، عدالت کا حکم

بدھ جون 15:00

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) امریکا کے ایک معزز ججڈانا سابرو نیبچوں کو دو ہفتوں کے اندر والدین کے سپرد کرنے کا حکم سنا دیا۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکا میں ایک جج نے حکم دیا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وسطی امریکا سے آنے والے تارکین وطن کے حوالے سے مکمل عدم برداشت کی پالیسی کے تحت علیحدہ کیے جانے والے خاندانوں کو تیس دنوں کے اندر اندر ملایا جائے۔

(جاری ہے)

سین ڈیاگو کے ڈسٹرکٹ کورٹ کی جج ڈانا سابرو نے حکم دیا ہے کہ پانچ برس سے کم عمر بچوں کو دو ہفتوں کے اندار ان کے والدین کے حوالے کیا جائے۔ جج سابرو نے امریکن سول لبرٹیر یونین کی جانب سے دائر کردہ کیس پر یہ فیصلہ منگل کو سنایا۔ جج نے مزید کسی بچے کو اس کے والدین سے جدا کرنے کے عمل کو بھی فوری طور پر روکے جانے کا فیصلہ دیا ہے۔ اس سلسلے میں صدر ٹرمپ بھی اپنی پالیسی ترک کر دینے کا اعلان کر چکے ہیں۔

متعلقہ عنوان :