کینیڈین وزیراعظم کو تحفہ لینا مہنگا پڑ گیا

تحفہ حکام کے سامنے ظاہر نہ کرنے پر کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈوپر100 کینیڈین ڈالر کا جرمانہ عائد کر دیا گیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ جون 15:07

کینیڈین وزیراعظم کو تحفہ لینا مہنگا پڑ گیا
کینیڈا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔27جون 2018ء) کینیڈین وزیراعظم کو تحفہ لینا مہنگا پڑ گیا۔ حکام کے سامنے ظاہر نہ کرنے پر جسٹن ٹروڈوپر100 کینیڈین ڈالر کا جرمانہ کردیا گیا۔قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق کینیڈا کے نوجوان وزیر اعظم جسٹن جسٹن ٹروڈ کو تحفہ لینا مہنگا پڑ گیا ہے۔ جسٹن ٹروڈ نے سن گلاسز کا تحفہ حکام کے سامنے ظاہر نہیں کیا ہوا تھا۔

جس کے بعد کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو پر جرمانہ عائد ک دیا گیا ہے۔ تحفہ حکام کے سامنے ظاہر نہ کرنے پر جسٹن ٹروڈوپر100 کینیڈین ڈالر کا جرمانہ کردیا گیا۔جسٹن ٹروڈو کو گزشتہ سال کینیڈین صوبے پرنس ایڈورڈ آئی لینڈ کےسربراہ نے دو بیش قیمت برانڈڈ سن گلاسز کے تحفے دیئے تھے،جسے ظاہر نہ کرنے پر وزیر اعظم کو 100ڈالر کا جرمانہ ادا کرنا پڑا ہے۔

(جاری ہے)

کینیڈین قانون کے مطابق ملکی وزیر اعظم کو 200ڈالر سے زائد مالیت کے تحائف کو 30 دنوں کے اندر لازمی ڈکلیئر کرنا ہوتا ہے۔ٹروڈو کے پریس سیکریٹری کے مطابق انتظامیہ کی غلطی کے باعث تحفے کو ڈکلیئر نہ کیا جاسکا، سن گلاسز کی قیمت 300 اور 500 ڈالر ہے۔یادرہےکہ کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نہ صرف کینیڈا بلکہ پوری دنیا میں ایک خاص شہرت رکھتے ہیں۔

کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو ان کی شخصیت کی وجہ سے پوری دنیا میں سراہا جاتا ہے جب کہ پاکستان میں بھی کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کے چاہنے والوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے۔جسٹن ٹروڈو کا سلوک مسلمانوں کے ساتھ بہت اچھا ہوتا پے،اور وہ مذہنی تہواروں پر مسلمانوں کو مبارکباد بھی پیش کرتے ہیں۔۔رمضان المبارک کا آغاز پر کینیڈین وزیر اعظم کی جانب سے مسلم کمیونٹی کے لیے خصوصی مبارکباد پر مبنی ویڈیو پیغام جاری کیا گیا تھا۔کینیڈین وزیراعظم کے اس اقدام کو مسلمانوں نے بہت سراہا تھا۔