الیکشن کمیشن میں مسلم لیگ (ن) سے نواز کا نام ہٹانے سے متعلق کیس کی سماعت 9جولائی تک ملتوی

کیا آپ چاہتے ہیں انتخابات کا عمل روک دیا جائے،الیکشن کمیشن کا در خواست گزار سے سوال نواز شریف کے نام پر ووٹ مانگے جارہے ہیں جبکہ وہ نا اہل ہیں،نواز شریف کو انتخابی مہم چلا نے سے روکا جائے، پاکستان عوامی تحریک کی استد عا

بدھ جون 15:20

اسلام آ با د (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹانے سے متعلق کیس کی سماعت 9جولائی تک ملتوی کر دی ، سماعت کے دوران درخواست گزار خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹایا جائے اور کیس کی جلد سے جلد سماعت مکمل کی جائے،،نواز شریف کے نام پر ووٹ مانگے جارہے ہیں،،نواز شریف نا اہل ہیں۔

بدھ کو الیکشن کمیشن میں مسلم لیگ ن کے نام سے نواز کا نام ہٹانے سے متعلق کیس کی سماعت ممبر سندھ عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی کمیشن کی سماعت کی ۔ درخواست گزار پاکستان عوامی تحریک کے خرم گنڈاپور، مخدوم نیاز انقلابی اور رئیس عبدالواحد کمیشن کے سامنے پیش ہوئے ، خرم نواز گنڈاپور نے کمیشن کو بتایا کہ الیکشن سر پر ہیں مسلم لیگ ن والے نواز شریف کے نام سے ووٹ مانگ رہے ہیں۔

(جاری ہے)

نواز شریف انتخابی مہم چلا رہے ہیں اس کو روکا جائے۔ خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹایا جائے۔ کیس کی جلد سے جلد سماعت مکمل کی جائے۔ کمیشن نے ہدایت کی کہ آئندہ سماعت 9 جولائی کو کریں گے۔ خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ اس وقت تک بیلٹ پیپر چھپ چکے ہو نگے۔ ممبر بلوچستان شکیل بلوچ نے ریماکس دئے کہ بیلیٹ پیپر پر پارٹی کا نام نہیں بلکہ انتخابی نشان اور امیدوار کا نام درج ہوتا ہے۔

ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے استفسار کیا کہ کوئی کہہ رہا ہے کہ وہ ہمارے لیڈر ہیں تو انہیں روکا جا سکتا ہے ۔ خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ چاہتے ہیں کہ مسلم لیگ ن کو انتخابی نشان الاٹ نا کیا جائے ۔ ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے ریمارکس دئے کہ کیا آپ چاہتے ہیں انتخابات کا عمل روک دیا جائے۔ اسے چلنے دیں, مخدوم نیازانقلابی نے بتایا کہ نواز شریف کا نام پارٹی صدارت سے تو ہٹا دیا گیا ہے تاہم پارٹی کے ساتھ نام منسلک ہے۔ الیکشن کمیشن نے 9 جولائی تک سماعت ملتوی کر دی۔