واٹر کمیشن چینی کمپنیوں کی خراب کارکردگی پربرہم، ملازمین اور مشینری مکمل کرنے کی ہدایت

کمیشن نے سالڈ ویسٹ بورڈ کو کچرا ٹھکانے لگانے کے حوالے سے دو ہفتے میں تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا

بدھ جون 17:08

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) واٹر کمیشن چینی کمپنیوں کی خراب کارکردگی پربرہم، چینی کمپنیوں کو مطلوبہ ملازمین کی تعداد اور مشینری مکمل کرنے کی ہدایت کردی،کمیشن نے سالڈ ویسٹ بورڈ کو کچرا ٹھکانے لگانے کے حوالے سے دو ہفتے میں تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

(جاری ہے)

بدھ کو سندھ ہائی کورٹ میں واٹر کمیشن نے چینی کمپنیوں کی خراب کارکردگی پر کمیشن نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ جب چینی کمپنیاں معاہدے پر عمل نہیں کررہی تو معاہدہ ختم کردیں ،ایم ڈی سالڈ ویسٹ بورڈ نے کہا کہ ڈسٹرکٹ سائوتھ میں چینی کمپنی نے مشینری لگانے کا دعوی کیا ہے ، سات سال کا کنٹریکٹ ہے، کمیشن نے ریمارکس دیئے کہ سات سال میں تو کراچی کو تباہ کردیں گے، چینی کمپنیوں میں کیا خوبی ہے کہ ان کا معاہد جاری رکھا جائے جسٹس امیر ہانی مسلم نے استفسار کیا کہ اب تک چینی کمپنیوں نے مطلوبہ ملازمین بھرتی کیوں نہیں کیے عدالت نے چینی کمپنیوں کو مطلوبہ ملازمین کی تعداد اور مشینری مکمل کرنے کی ہدایت کی،چینی کمپنی کے وکیل نے جواب دیا کہ کئی ماہ سے ہماری ادائیگی نہیں ہوئی ،سالڈ ویسٹ بورڈ نے موقف اپنایا کہ واٹر کمیشن کے حکم پر اپریل کے بعد ادائیگی روکی گئی تھی ،چینی کمپنی کے ایم ڈی نے کہا کہ جو صورتحال ہمیں بتائی گئی تھی اس سے مختلف حالات کا سامنا ہے ، کمیشن نے ریمارکس دیئے کہ آپ کے پاس گاڑیاں اور مشینری مکمل نہیں صفائی کیا کریں گے اگر آپ سے کام نہیں ہوتا تو مقامی لوگوں یا افغان باشندوں کو کچرا اٹھانے کی ذمہ داری دے دیتے ہیں ،،عدالت نے سالڈ ویسٹ بورڈ کو کچرا ٹھکانے لگانے کے حوالے سے دو ہفتے میں تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 28 جون تک ملتوی کردی۔