لندن، ملکہ برطانیہ نے 3پاکستانی نوجوانوں کو کوئنز ینگ لیڈر ایوارڈ سے نوازا

یہ ایوارڈ ایسے نوجوانوں کو دیا جاتا ہے جو معاشرے میں کسی اہم سماجی خدمت کا بیڑا اٹھائے ہوئے ہوں

بدھ جون 17:42

لندن، ملکہ برطانیہ نے 3پاکستانی نوجوانوں کو کوئنز ینگ لیڈر ایوارڈ سے ..
لندن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) سماجی خدمات انجام دینے پرملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم نے 3پاکستانی نوجوانوں کو کوئنز ینگ لیڈر ایوارڈ سے نوازا، یہ ایوارڈ ایسے نوجوانوں کو دیا جاتا ہے جو معاشرے میں کسی اہم سماجی خدمت کا بیڑا اٹھائے ہوئے ہوں۔بین الاقوامی میڈیا کے مطابق ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم کی جانب سے 3 پاکستانی نوجوانوں کو سماجی خدمات انجام دینے پر کوئنز ینگ لیڈر ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔

گزشتہ روز شاہی محل بکنگھم پیلس میں کوئنز ینگ لیڈرز ایوارڈ کی تقریب منعقد کی گئی، جس میں پاکستانی نوجوانوں ہارون یاسین، حسن مجتبی اور ماہ نور سید کو کوئنز ینگ لیڈرز ایوارڈ دیا گیا۔کوئنز ینگ لیڈرز ایوارڈ کی تقریب میں پاکستان سمیت مختلف ممالک کے ان تمام نوجوانوں کو اعزاز سے نوازا گیا جو معاشرے میں مثبت تبدیلی کے لیے کوشاں ہیں۔

(جاری ہے)

یہ ایوارڈ کامن ویلتھ گروپ کے رکن ممالک کے ایسے نوجوانوں کی شناخت کرتا ہے جن کی عمر 18 سے 29 برس ہو اور وہ اپنی کمیونٹی میں کسی اہم سماجی کام کا بیڑا اٹھائے ہوئے ہوں، جو کسی کو جینے کی صحیح راہ اور امید دکھا رہے ہوں۔

واضح رہے کہ پاکستانی نوجوان حسن مجتبی زیدی 'ڈسکورنگ نیو آرٹسٹس' کے بانی ہیں جو آرٹ کے ذریعے بچوں کی تخلیقی صلاحیتوں کو ابھارتے ہیں۔ وہ بچوں کو مفت آرٹ ٹریننگ دیتے ہیں اور اس کے ساتھ جو طلبا تعلیمی اخراجات نہیں اٹھا سکتے انہیں تعلیم بھی فراہم کرتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :