ملائیشین وزیراعظم سے 273ملین ڈالر مالیت کے غیر قانونی اثاثہ جات برآمد

تحقیقاتی اداروں نے نجیب رزاق کے گھر، دفاتر اور دیگر مقامات سے تحویل میں لیے گئے اثاثوں کی فہرست جاری کردی

بدھ جون 18:22

کوالالمپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) ملائیشیا کے سابق وزیراعظم نجیب رزاق سے اب تک 273 ملین ڈالر کی مالیت کے غیر قانونی اثاثہ جات برآمد کرائے جا چکے ہیں۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق تحقیقاتی اداروں نے ملائیشیا کیسابق وزیر اعظم نجیب رزاق کے گھر، دفاتر اور دیگر مقامات سے تحویل میں لیے گئے اثاثوں کی فہرست جاری کردی گئی ہے۔

ان ثاثوں کی مالیت لگ بھگ 273 ملین ڈالر بنتی ہے جن میں 12 ہزار سے زائد زیورات، 423 مہنگی گھڑیاں، مشہور برانڈ کے 234 چشمے اور 567 ہینڈ بیگز ہیں جو سابق وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے زیر استعمال تھے۔ سابق وزیراعظم نجیب رزاق اور ان کی اہلیہ روسما منصور پر آمدنی سے زائد اثاثے رکھنے کے الزامات ہیں۔میڈیا سے بات کرتے ہوئے تجارتی جرائم کے وفاقی تحقیقاتی ادارے کے سربراہ امر سنگھ کا کہنا تھا کہ ملائیشیا کی تاریخ میں آج تک اس سے زیادہ مالیت کی اشیا تحویل میں نہیں لی گئی ہیں جس پر سابق وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے خلاف مقدمہ درج کرایا جائے گا اور تفتیش کے لیے طلب بھی کیا جائے گا جس کے لیے وزارت داخلہ و قانون کی اجازت درکار ہے۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ ملائیشیا کے نئے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے ذمہ داریاں سنبھالتے ہی سابق وزیراعظم نجیب رزاق پر سرکاری خزانے سے چار ارب ڈالر کی ہیرا پھیری کے الزام کی تحقیقات کا حکم دیا تھا جس پر عمل در آمد کرنے کے لیے سابق وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے بیرون ملک سفر پر پابندی عائد کی گئی تھی۔ تاہم سابق وزیراعظم نے خود پر لگنے والے الزامات کی تردید کی تھی۔۔