کامونکے ، عید کے روز قتل ہونے والے عارف قصاب کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر لواحقین کا شدید احتجاج

ملزمان سر عام ،دھندناتے پھر رہے ہیں، مقتول کے اہل خانہ اور سنگین نتائج کی دھمکیاں

بدھ جون 18:36

کامونکے (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) عید کے روز قتل ہونے والے عارف قصاب کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر لواحقین کا شدید احتجاج ‘ ملزمان سر عام دھندناتے پھر رہے ہیں، مقتول کے اہل خانہ اور سنگین نتائج کی دھمکیاں،تفصیل کے مطابق تھانہ صدر کامونکے کے علاقہ محلہ شریف پورہ میں عید کے روز بھتہ نہ دینے پاداش دیرنیہ رنجش پر علاقہ کے بااثر افراد نے عارف قصاب کو اس وقت اندھادھند فائرنگ کر کے قتل کر ڈالا جب وہ عید کے روز اپنے بزرگوں کی قبروں پر دعا کر رہا تھا تو پہلے سے موجود بااثر ملزمان نواب گادی،اشرف گادی،یٰسین گادی وغیرہ نے اندھا دھند فائرنگ کر کے عارف قصاب کو قتل کرڈالا ،وقوعہ کے بعد ملزمان اسلحہ لہراتے ہوئے موقع سے فرار ہو گئے،وقوعہ کی فوری طور پر اطلاع تھانہ صدر کامونکے کو دی گئی ،مقتول عارف قصاب کے جسم میں درجنوں گولیاں نکالی گئی،،پولیس نے نامزد ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کر لیا مگر دس یوم گزرنے کے باوجود پولیس قتل کے کسی بھی ملزم کو گرفتار نہ کر سکی،ذرائع کے مطابق ملزمان علاقہ میں ہی گھوم رہے ہیں ،گزشتہ روز مقتول کے بیٹے اور اہل خانہ نے ملزمان کی عدم گرفتاری پر شدید احتجاج کیا ،اہل خانہ کے مطابق گادی برادران نے علاقہ میں دہشت کا بازار گرم کر رکھا ہے اور ہر دوکاندار سے بھتہ وصول کرتے ہیں ،مقتول عارف اور اسکی فیملی نے بھتہ دینے سے انکار کیا جس کے بارے میں متعدد بار مقامی پولیس کو اطلاع کی گئی مگر پولیس نے بھتہ مافیا کیخلاف کوئی موثر کارروائی نہ کی جس کی وجہ سے ملزمان اتنے بڑکے کہ انہوں نے دیدہ دلیری سے سرعام عارف کو گولیاں کا نشانہ بنا ڈالا اور قتل کے بعد بھی علاقہ سے آتشی اسلحہ سے لیس ہو کر گھوم رہے ہیں اور مقتول کے اہل خانہ اور وقوعہ کے شہادتیوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں ،،چیف جسٹس آپ پاکستان،، آر پی او گوجرانوالہ، سی پی او گوجرانوالہ ودیگر اعلیٰ حکام سے مقتول کے اہل خانہ نے اپیل کرتے ہوئے ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کر دیا۔