موٹروے پولیس نے بغیر ہیلمٹ موٹر سائیکل سواروں کے خلاف مہم ، جی ٹی روڈ پر چلنے والی HTV گاڑیوں کے خلاف سخت چیکنگ کا آغاز کر دیا ہے،محبوب اسلم

بدھ جون 21:18

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) ڈی آئی جی نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس این فائیو نارتھ محبوب اسلم نے کہا ہے کہ نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس نے بغیر ہیلمٹ موٹر سائیکل سواروں کے خلاف مہم کے ساتھ ساتھ جی ٹی روڈ پر چلنے والی HTV گاڑیوں کے خلاف سخت چیکنگ کا آغاز کر دیا ہے، مسلسل سیکنڈ لین کا استعمال، اوورلوڈنگ اور ڈرائیونگ کے دوران غفلت و لاپرواہی برتنے والے ڈرائیورز کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جا رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس این فائیو نارتھ محبوب اسلم کی زیر نگرانی آپریشنل میٹنگ کا انعقاد کیا گیا جس میں این فائیو نارتھ زون جوکہ پشاور تا لاہور جی ٹی روڈ اور مری ایکسپریس وے پر محیط ہے، پر بغیر ہیلمٹ موٹر سائیکل سواروں اور HTVsکے خلاف جاری مہم کی تاحال کارکردگی اور مزید بہتر بنانے کیلئے کئے گئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔

(جاری ہے)

مذکورہ آپریشنل میٹنگ میں تمام سیکٹر کمانڈرز اور بیٹ کمانڈرز نے شرکت کی۔ اس موقع پر ڈی آ ئی جی محبوب اسلم نے بتایا کہ بغیر ہیلمٹ موٹر سائیکل سواروں کے خلاف کامیاب مہم میں 01-04-2018سی26-06-2018 تک 437104 موٹرسائیکل سواروں کو چالان جاری کرنے کے ساتھ ساتھ 87625482 روپے کا بھا ری جرمانہ کیا گیا۔ ڈی آئی جی نے مزید بتایا کہ اس مہم کے دوران 36381 موٹر سائیکلز کو تحویل میں لیا گیا اور 12244موٹرسائیکل سواروں کے کاغذات کی ضبطگی عمل میں لائی گئی۔

ڈی آئی جی نے کہا کہ موجودہ مرحلے میں جی ٹی روڈ این فائیو نارتھ پرٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والی مال بردار گاڑیوں (HTVs) کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مہم کے دوران مال بردار گاڑیوں کے ڈرائیورزکیطرف سے اوور لوڈنگ، اوور سپیڈنگ، لین وائلیشن اور غفلت و لاپرواہی سے گاڑی چلانے والی بے ضابطگیوں کو خصوصی طور پر مد ِ نظر رکھا جا رہا ہے اور اس مد میں یکم مئی 2018سے 145819مال بردار گاڑیوں کے ڈرائیور حضرات کو 78659508روپے کا بھاری جرمانہ کیا جا چکا ہے۔

آخر میں ڈی آئی جی محبوب اسلم نے تمام آفیسرز کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے اس مہم میں مزید بہتری لانے کا پر عزم اعادہ کیا تاکہ بڑھتے ہوئے ٹریفک حادثات کے انسداد اور سڑک استعمال کرنے والوں کو محفوظ سفر کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے۔