پشاور،امراض خون میں اضافہ کی وجوہات کوختم کرناہوگا،صاحبزادہ حلیم

بدھ جون 22:47

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) فرنٹیئرفائونڈیشن کے چیئرمین صاحبزادہ محمد حلیم نے کہا ہے کہ تھیلی سیمیامیں اضافہ کی وجوہات کوختم کرنا ہوگا،اس کے بغیراس موروثی مرض کے خاتمہ کی کوئی بھی کوشش کامیاب نہیں ہوگی،عوام میں عطیات خون کے حوالے سے شعور اجاگرکئے بغیرامراض خون میں مبتلا بچوں اور دیگرمریضوں کوانتقال خون میں مشکلات حائل رہیںگی،ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ آئندہ نسل کو تھیلی سیمیا سے پاک معاشرہ دینے اور ایک محفوط کل کیلئے ابھی سے نہ صرف اقدامات کرنا ہونگے بلکہ امراض خون کے پھیلائومیں اضافہ کی وجوہات کوبھی ختم کرنا ہوگا، جب تک موروثی امراض میں مبتلا خاندانوں میں شادیوں کارواج ختم نہیں کیاجاتااس وقت تک ہمیں خون کے ان موروثی امراض کاسامنا رہے گا، انہوں نے کہا ہے کہ امراض خون میں مبتلا بچوں کی زندگیاں بچانے کیلئے عوام خون کے عطیات دیں ،،گرمی کی شدت اور تعلیمی اداروں میں تعطیلات کے باعث عطیات خون میں کمی آئی ہے جس کے باعث امراض خون میں مبتلا بچوں کو انتقال خون میں مشکلات درپیش ہیں،انہوں نے کہا کہ چونکہ بلڈ ڈونرزمیں ایک بڑی تعداد طلبہ کی ہے ، انہوں نے مخیرحضرات سے حسب سابق مزید تعاون کی بھی اپیل کی اور کہا کہ آئندہ نسل کو تھیلی سیمیا سے پاک معاشرہ دینے کیلئے تمام ممکنہ وسائل بروئے کارلائے جارہے ہیں ۔

متعلقہ عنوان :