مزنگ کی گلی،جعلی برانڈ،میڈ ان سویزرلینڈ

غلط لیبلنگ،مضر صحت کیمیکلز،فلیورزکے استعمال سے جعلی چاکلیٹس،جیلی تیار کرنے والی فیکٹری سربمہر زائدلمعیاد اشیاء کی تاریخ تبدیل کرنے پر معروف بیکری ،پی ایف اے کا لوگو استعمال کرنے پر واٹر فلٹریشن پلانٹ سیل تین ہزار کلو تیار چاکلیٹ، 1000 کلوتیار جیلی اور بھاری مقدار میں خام مال،مصنوئی فلیورز،کیمیکلز تلف برآمد کر کے تلف ناقص انتظامات پر متعدد فوڈ پوائنٹس کو1لاکھ5ہزارکے جرمانے 158فوڈ پوائنٹس کووارننگ نوٹس جاری

بدھ جون 23:01

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 جون2018ء) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے مزنگ کے علاقے میں کاروائی کرتے ہوئے کیمکلز اورمصنوئی فلیورز سے تیار کی گئی جعلی چاکلیٹ اور جیلی پر سوئٹزر لینڈ کے نام کی غلط لیبلنگ کرنے پر فیکٹری سیل کر دی۔تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے ہوئے ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہناتھا کہ جعل ساز مافیا کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کی فوڈ سیفٹی ٹیموں نے مضر صحت کیمیکلز،کاسمیٹیکس کلرز ،مصنوئی فلیورز کی ملاوٹ سے جعلی چاکلیٹس اور جیلی تیار کرنے والی فیکٹری سیل کر دی ۔

فلیورڈچاکلیٹ اور جیلی کی تیاری میں پھلوں کی جگہ زائد المعیاد اجزاء کا استعمال کیا جا تا تھا۔ مضر صحت چاکلیٹس، جیلی پر سوئٹزر لینڈ کے نام کی گمراہ کن لیبلنگ،غلط تاریخ اور ایڈریس درج کرکے مختلف شہروں کے بڑے سٹورز پر سپلائی کی جاتی تھی۔

(جاری ہے)

فیکٹری مزنگ کے رہائشی علاقے چاچا پٹھوارا میں کام کرنے والی نے جعل ساز فیکڑی کا سراغ پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ویجیلنس سیل نے ریکی کر کے لگایا۔

3,000کلو تیار چاکلیٹ، 1000 کلوتیار جیلی اور بھاری مقدار میں خام مال،مصنوئی فلیورز،کیمیکلز تلف برآمد کر کے تلف کر دیے گئے۔ اس موقع پر ڈی جی فوڈ کا کہنا تھا کہ عوام کو جعلی اشیاء خورونوش فراہم کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔دوسری جانب فوڈ سیفٹی ٹیموںنے جی ٹی روڈ شاہدرہ میںکاروائی کرتے ہوئے فریش بیکری کو صفائی کے ناقص انتظامات ، زائدلمعیاد اشیاء کی تاریخ تبدیل کر کے فروخت کرنے ، غیر معیاری اجزاء استعمال کرنے ،حشرات کی بھرمار ، زنگ آلودہ اور گندے فریزر کی موجودگی،کھلے رنگوں،سکرین،مصنوئی فلیورز کا استعمال کرنے ،کیمیکل ڈرمزمیں پانی سٹور کرنے اورملازمین کے میڈیکلز کی عدم موجودگی پر بیکری کوسیل کر دیا مزید برآں فوڈ سیفٹی ٹیمز نے تاج پورہ میں موجود فوڈز واٹر فلٹریشن پلانٹ کو پی ایف اے کا لوگو استعمال کرنے ،آر او پلانٹ کی عدم موجودگی ، غلط لیبلنگ، سابقہ ہدایات پر عمل نہ کرنے،صفائی کے ناقص انتظامات ، ریکارڈ اور ملازمین کے میڈیکل سرٹیفیکیٹس کی عدم دستیابی پر پلانٹ کو سربمہرکر دیا۔

علاوہ ازیں فوڈ سیفٹی ٹیمز نے صحت دشمن عناصر کے خلاف کاروائیاں کرتے ہوئی15فوڈ پوائنٹس کوسابقہ ہدایات پرعمل نہ کرنے، ورکرز کے میڈیکلز عدم موجودگی، غیر معیاری اجزاہ استعمال کرنے ،زائدلمعیاد اشیا ء کی موجودگی پر مجموعی طور پر1لاکھ5ہزار کے جرمانے عائد کئے ۔ انتظامات میں مزید بہتری کے لیے 158فوڈ پوائنٹس کو وارننگ نوٹسز جاری کئے گئے جن پر عمل نہ کرنے کی صورت میں سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :