صدر ٹرمپ کے دورہ برطانیہ پر 4 کروڑ ڈالر خرچ ہوں گے

بدھ جولائی 16:30

صدر ٹرمپ کے دورہ برطانیہ پر 4 کروڑ ڈالر خرچ ہوں گے
واشنگٹن۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جولائی2018ء) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے برطانیہ کے آئندہ دورے کے دوران سکورٹی وجوہات کی بنا پر لندن میں انکی کسی مصروفیت کا پیشگی شیڈول جاری نہیں کیا جائے گا ۔ برطانوی اخبار "ڈیلی میل" کے مطابق امریکی صدر کے لیے انتہائی سخت سکیورٹی اٴْن بھرپور احتجاجی مظاہروں کے اندیشوں کے سبب کی جا رہی ہیں جن کے دوران برطانوی دارالحکومت میں 50 ہزار کے قریب شہریوں کے سڑکوں پر آنے کا قوی امکان ہے۔

توقع ہے کہ 3 روزہ دورے پر 4 کروڑ ڈالر کے قریب خرچ ہو جائیں گے۔ اس دوران حفاظتی انتظامات کے واسطے 10 ہزار کے قریب پولیس اہل کار اور خفیہ پولیس کے ارکان مامور ہوں گے۔برطانوی اخبار "ڈیلی میل" کے مطابق دونلڈ ٹرمپ کی کیڈلک ماڈل کی گاڑی کو دنیا کے ایک سب سے بڑے عسکری نقل و حمل کے طیارے (سی کلیکسی سپر) میں منتقل کر دیا گیا ہے۔

اس گاڑی کو بیسٹ کا نام دیا گیا ہے اور اس کی قیمت 16 لاکھ ڈالر ہے۔

دورے کے سکیورٹی انتظامات میں طیارہ بردار امریکی بحری جہاز(ٹرومین ایس ہیری یو ایس ایس) بھی سرگرم ہو گا جو برطانیہ کے جنوبی ساحلوں پر امریکی بیڑے میں شامل ہے۔ اس طیارہ بردار جہاز کی قیمت 45 لاکھ ڈالر اور وزن 97000 ٹن ہے۔علاوہ ازیں دورے کے آغاز سے قبل صدر ٹرمپ اور ان ہمراہ وفد کے واسطے سلکور سکائی ماڈل کے ہیلی کاپٹر بھی لندن پہنچیں گے۔

برطانوی کابینہ کی پریذیڈنسی کی جانب سے جاری ایک سرکاری بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ برطانوی دارالحکومت میں انتہائی مختصر وقت گزاریں گے۔ برطانوی خاتون وزیراعظم ٹریسا مے آکسفورڈ شائر کے بکنگھم پیلس میں ایک ورکنگ ڈِنر کا اہتمام کریں گی۔اگلے روز امریکی صدر وِنڈسر کیسل میں ملکہ الزبتھ کے ساتھ چائے نوش فرمائیں گے اور پھر چیکرز میں برطانوی وزیراعظم کے دیہی علاقے کے دفتر میں ٹریزا مے کے ساتھ بات چیت کریں گے۔

اسی دوران ٹرمپ کی اہلیہ کے لیے ایک سیاحتی دورہ ترتیب دیا جائے گا جس کے دوران ان کے ہمراہ ٹریزا مے کے شوہر فلپ مے ہوں گے۔دورے کے شیڈول سے ظاہر ہوا ہے کہ ٹرمپ اپنے دورے کا زیادہ تر وقت اسکاٹ لینڈ میں گزاریں گے جو امریکی صدر کی والدہ کا آبائی علاقہ بھی ہے۔ ٹرمپ وہاں دو گولف کورس کے مالک بھی ہیں۔

Your Thoughts and Comments