نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ کے علاوہ دیگر 2 جیلوں میں بھی منتقل کرنے پر غور

دونوں رہنماوں کو لاہور ائیرپورٹ سے ہیلی کاپٹر پر جیل منتقل کیا جائے گا، ائیرپورٹ کی سیکورٹی کہ ذمہ داری نگران صوبائی حکومت کے پاس ہوگی، ائیرپورٹ پر اترتے ہی امیگریشن حکام دونوں کو گرفتار کرکے نیب حکام کے حوالے کرینگے

muhammad ali محمد علی بدھ جولائی 21:28

نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ کے علاوہ دیگر 2 جیلوں میں بھی منتقل ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جولائی2018ء) نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ کے علاوہ دیگر 2 جیلوں میں بھی منتقل کرنے پر غور، دونوں رہنماوں کو لاہور ائیرپورٹ سے ہیلی کاپٹر پر جیل منتقل کیا جائے گا، ائیرپورٹ کی سیکورٹی کہ ذمہ داری نگران صوبائی حکومت کے پاس ہوگی، ائیرپورٹ پر اترتے ہی امیگریشن حکام دونوں کو گرفتار کرکے نیب حکام کے حوالے کرینگے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ(ن) کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کی نیب عدالت کی جانب سے مجرم قرار دئیے جانے اور سزا سنائے جانے کے بعد ان کی گرفتاری کے معاملے پر وفاقی وزارت داخلہ کا ایک اہم اجلاس منعقد ہوا، اجلاس کی صدارت سیکرٹری داخلہ یوسف نسیم کھوکھر نے کی، اجلاس میں چیف سیکرٹری پنجاب ، آئی جی ، ڈپٹی چیئرمین نیب ، ڈی جی نیب لاھور ، ڈی جی ایف آئی اے اور چیف کمشنر اسلام آباد بھی شریک تھے۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نواز شریف اور مریم نواز کو لاہور ائیرپورٹ سے ہیلی کاپٹر پرجیل منتقل کیا جائے گا۔ وزارت داخلہ نے نواز شریف اور مریم نواز کی گرفتاری کیلئے نیب کو ہیلی کاپٹر دینے کی منظوری دے دی ہے۔ لاہور ائیرپورٹ کی سیکورٹی کہ ذمہ داری نگران صوبائی حکومت کرے گا جبکہ ائیرپورٹ پر اترتے ہی امیگریشن حکام دونوں کو گرفتار کرکے نیب حکام کے حوالے کرینگے۔

ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ اسلام آباد میں سیکورٹی کے حالات دیکھ کر نواز شریف اور مریم کو احتساب عدالت میں پیش کرنے کا فیصلہ ہوگا، اگر سیکورٹی حالات ٹھیک نہ ہوئے تو پھر جیل میں بھی جج سے جوڈیشل ریمانڈ حاصل کیا جائے گا۔ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کو جیل لے جایا جائے گا، پھر وہیں محمد بشیر نواز شریف اور مریم کے جوڈیشل ریمانڈ کی منظوری دے دیں گے۔ ذرائع کا مزید بتانا ہے کہ نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ کے علاوہ دیگر 2 جیلوں میں بھی منتقل کیے جانے پر غور کیا جا رہا ہے۔ سیکورٹی خدشات کے باعث نواز شریف اور مریم نواز کو وقتی طور پر کھوٹ لکھپت یا کسی اور جیل میں بھی منتقل کیا جا سکتا ہے۔