طویل اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ ، کاروبا رکو متاثر کر رہی ہے۔ صدر ایوان صنعت و تجارت سکھر

بدھ جولائی 23:40

سکھر۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جولائی2018ء) ایوانِ صنعت و تجارت سکھرکے صدر انجینئر عبدالفتاح شیخ نے ایوان کی قائمہ کمیٹی برائے سیپکو کے اجلاس میں پیش کردہ شہر کے مختلف علاقوں سے موصولہ طویل لوڈ شیڈنگ اور ڈیٹکشن بلوں کی شکایات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہر کے مرکزی علاقوں میں طویل اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور وولٹیج میں کمی بیشی سے بجلی کے گھریلو آلات خراب ہونے کے ساتھ ساتھ کاروبار بھی بری طرح متاثر ہورہا ہے گنجان آباد علاقوں میں گرمی کے باعث شہری جنریٹر وغیرہ استعمال کرنے پر مجبور ہیں جس سے ماحولیاتی آلودگی بھی بڑھ رہی ہے۔

کاروباری مراکز میں گرم موسم کے دوران بجلی نہ ہونے کے باعث کاروباری سرگرمیوں میں واضع کمی ہوئی ہے جس کے لا محالہ اثرات مجموعی کاروباری ماحول پر منفی طور پر اثر انداز ہورہے ہیں۔

(جاری ہے)

یہ صورتحال سیپکو حکام کے نوٹس میں لائی جاچکی ہے اور اس کے سدِ باب کیلئے سیپکو حکام جلد از جلد تسلی بخش اقدامات اختیار کریں۔ ملک کے گرم ترین علاقوں میں سکھر شہر بھی شمار ہوتا ہے جہاں بجلی کی عدم فراہمی صورتحال کو تشویشناک بنا دیتی ہے۔ وولٹیج میں اُتار چڑھائو قیمتی برقی آلات کو خراب کرنے کا باعث ہے ۔ متعلقہ سیپکو اسٹاف کی توجہ سے اس پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ اس سلسلے میں ایوان کا وفد جلد ہی چیف ایگزیکٹو آفیسر سیپکو سے خصوصی ملاقات میں اپنے تحفظات کے سدِ باب کا مطالبہ کریگا۔

متعلقہ عنوان :