چیئرمین پی ٹی وی تقرری کیس کی سما عت،

سپر یم کو رٹ نے فیصلہ محفو ظ کر لیا عطاء الحق قاسمی ایم پی ون سکیل کے اہل تھے، اسحاق ڈار آ کر بتائیں اتنی بھاری تنخواہ کیسے دی چیف جسٹس ثاقب نثارکے سما عت کے دوران ر یما رکس

جمعرات جولائی 16:56

چیئرمین پی ٹی وی تقرری کیس کی سما عت،
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جولائی2018ء) سپریم کورٹ نے چیئرمین پی ٹی وی کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا، چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ کیا عطاء الحق قاسمی ایم پی ون سکیل کے اہل تھے، اسحاق ڈار آ کر بتائیں اتنی بھاری تنخواہ کیسے دی ۔ جمعرات کو سپریم کورٹ میں چیئرمین پی ٹی وی تقرری کیس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا عطاء الحق قاسمی ایم پی ون سکیل کے اہل تھی سیکرٹری خزانہ کی منظوری کے بغیر مراعات نہیں مل سکتیں ، سابق سیکرٹری خزانہ نے بتایا کہ پی ٹی وی کمرشل ادارہ ہے، بجٹ فنانس سے نہیں جاتا، اٹارنی جنرل نے بتایا کہ تنخواہ کی سمری پر پینسل سے نوٹ لکھا گیا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اسحاق ڈار محبت سے تشریف لے آئیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ اسحاق ڈار آ کر بتائیں اتنی بھاری تنخواہ کیسے دی اسحاق ڈار کی کمر میں اتنا درد ہے کہ وہ آ نہیں سکتی سیکرٹری خزانہ نے بتایا کہ رولز کے تحت سمری وزارت خزانہ کو بھیجی جاتی ہے۔

(جاری ہے)

اٹارنی جنرل نے بتایا کہ وزیراعظم کو اختیار نہیں تھا کہ دوستوں میں ایسے پیسے تقسیم کرتے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ عدالت کو یہ بتا دیں تحقیقات کس سے کرائیں ۔وکیل عائشہ حامد نے بتایا کہ عطاء الحق قاسمی رقم واپس نہیں کرنا چاہتے، سپریم کورٹ نے عطاء الحق قاسمی تقرری کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا۔