تاثر درست نہیں کہ عبوری حکومت کسی ایک سیا سی جماعت سے امتیازی سلوک روارکھے ہوئے ہے ‘شوکت جاوید

ن) لیگ الیکشن کمیشن آف پاکستان کے ضابطہ اخلاق پر عمل کرے تو انہیںکسی قسم کی رکاوٹ کا سامنا نہیں کرنا پڑیگا‘نگران صوبائی وزیر داخلہ

جمعرات جولائی 17:32

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جولائی2018ء) صوبائی وزیر داخلہ شوکت جاوید نے کہا ہے کہ یہ تاثر درست نہیں کہ عبوری حکومت کسی ایک سیا سی جماعت سے امتیازی سلوک روارکھے ہوئے ہے ،،الیکشن وقت پر ہوں گے،( ن) لیگ الیکشن کمیشن آف پاکستان کے ضابطہ اخلاق پر عمل کرے تو انہیںکسی قسم کی رکاوٹ کا سامنا نہیں کرنا پڑیگا۔ یہ بات انہوں نے یہاں میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کہی ۔

شوکت جاوید نے کہا کہ تمام سیاسی پارٹیوں کو ریلیز نکالنے ،،جلسہ کرنے اور تقریر کی مکمل آزادی حاصل ہے تاہم یہ آزادی الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق سے منسلک ہے۔ انھوں نے کہ ائرپورٹ ایک پروٹیکٹڈ جگہ ہے جہاں مجاز عملہ اور مسافر کے علاوہ کوئی داخل نہیں ہوسکتا ۔ اگر کسی نے سیاست چمکانے کے لیے اندر داخل ہونے کی کوشش کی تو اسے قانون کا سامنا کرنا پڑے گا۔

انھوں نے کہا کہ رینجزز آن کال ہیں۔ کل نواز شریف کی آمد پر اگر ضرورت پڑی تو رینجرز کو بلا لیا جائیگا۔انہوںنے کہا کہ نواز شریف کی گرفتاری پر اگر معاونت مانگی گئی تو پنجاب حکومت یہ معاونت فراہم کریگی۔ انھوں نے کہ کہ نواز شریف کی آمد پر ائیر پورٹ سے ملحقہ راستے بند نہیں کیے جائیں گے۔ تاہم ایئر پورٹ کی حفاظت کے لیے خصوصی اقدامات کیے جا سکتے ہیں۔شوکت جاوید نے کہا کہ تمام سرکاری اہلکار اور عبور ی حکومت کے نمائندے وزراء اور چیف منسٹر سب نیوٹر ل ہیں۔

Your Thoughts and Comments