نواز شریف کی گرفتاری کے لیے 2ہیلی کاپٹر لاہور ائیرپورٹ پہنچ گئے

نواز شریف کو اسی ہیلی کاپٹر سے اڈیالہ جیل منتقل کیا جائے گا جس کو وہ بطور وزیر اعظم استعمال کرتے تھے

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعرات جولائی 23:27

نواز شریف کی گرفتاری کے لیے 2ہیلی کاپٹر لاہور ائیرپورٹ پہنچ گئے
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار-12جولائی 2018ء) :نواز شریف کی گرفتاری کے لیے 2ہیلی کاپٹر لاہور ائیرپورٹ پہنچ گئے۔ نواز شریف کو اسی ہیلی کاپٹر سے اڈیالہ جیل منتقل کیا جائے گا جس کو وہ بطور وزیر اعظم استعمال کرتے تھے۔فصیلات کے مطابق نواز شریف اور مریم نواز کو ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا سنا دی گئی ہے۔اس سزا کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کو 11سال قید بامشقت علاوہ 80 ملین پاونڈ جرمانہ جبکہ مریم نواز کو 8 سال قید بامشقت اور 20 ملیں جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے اور دوسری جانب مریم نواز کے خاوند کیپٹن (ر) صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور وہ اس وقت اڈیالہ جیل کی بی کلاس میں موجود ہیں جبکہ سابق وزیر اعظم نواز شریف اور مریم نواز بھی گرفتاری دینے کے لیے وطن واپس پہنچ رہیں ہیں۔

(جاری ہے)

کچھ دیر قبل سابق وزیراعظم نوازشریف ایون فیلڈ اپارٹمنٹس سے ہیتھرو ائیرپورٹ کے لیے روانہ ہو گئے ہیں۔مرکزی دروازے پر مظاہرین کی موجودگی نے سابق وزیر اعظم کو عقبی دروازے سے نکلنے پر مجبور کردیا۔

وہ کچھ ہی دیر میں ہیتھرو ائیرپورٹ پہنچیں گے۔جہاں سےنواز شریف آج رات 12بج کر 45 منٹ پر لندن سے نجی پرواز پر روانہ ہوں گے۔وہ نجی پرواز ای وائے 18سے روانہ ہوں گے۔نواز شریف کے ساتھ پارٹی رہنما اور کچھ میڈیا شخصیات بھی ہوں گے ۔نواز شریف لندن سے13جولائی صبح 8:45پر ابوظہبی پہنچیں گے۔ جہاں وہ 7 گھنٹے قیام کریں گے اور وہاں سے نجی پرواز ای وائے 243سے پاکستان کے لیے روانہ ہوں گے اور جمعہ کی شام 6بج کر 15منٹ پر لاہور پہنچیں گےجہاں انہیں جہاز سے اترتے ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

یہاں لاہور ائیرپورٹ پر نیب کی ٹیم پہنچ چکی ہے اور 2 ہیلی کاپٹر بھی منگوا لئیے گئے ہیں۔یہ وہی ہیلی کاپٹر ہیں جنہیں نواز شریف اپنی وزارت اعظمیٰ میں بطور وزیراعظم استعمال کرتے تھے۔کل کے وزیر اعظم آج مجرم بن کر اسی ہیلی کاپٹر پر جیل منتقل کئیے جائیں گے۔دوسری جانب واز شریف کی اڈیالہ جیل متوقع آمد کی پیش نظر اڈیالہ جیل کی سیکیورٹی ریڈ الرٹ کر دی گئی ہے۔جیل کے اندر اور باہر رینجرز تعینات ہیں جبکہ اڈیالہ روڈ پر دو چیک پوسٹیں بنائیں گئی ہیں۔امن و امان کو قابو میں رکھنے کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے۔جبکہ کسی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیےکوئیک ریسپانس فورس بھی تیار ہو گئی۔