ملزم راؤ انوار کی غیرقانونی اسلحہ اور دھماکاخیزمواد رکھنے سے متعلق کیس میں ضمانت منظور

عدالت نے مرکزی ملزم راؤ انوار کو 10 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا ہے

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ جولائی 11:54

ملزم راؤ انوار کی غیرقانونی اسلحہ اور دھماکاخیزمواد رکھنے سے متعلق ..
کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔20 جولائی 2018ء) انسداد دہشتگردی عدالت نے راؤ انوار کی ضمانت منظور کرلی۔ راؤانوارکے خلاف غیرقانونی اسلحہ اور دھماکاخیزمواد رکھنےسے متعلق کیس تھا جس میں راؤ انوار کی ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کی غیر قانونی اسلحہ اور دھماکہ خیز مواد رکھنے پر ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔

عدالت نے راؤ انوار کو 10 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔راؤ انوار کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ 10 لاکھ روپے ضمانتی مچلکوں کے عوض جمع کروائیں جس کے بعد ان کی ضمانت باقاعدہ طور پر منظور ہو جائے اور انہیں رہا کیا جائے گا۔ اس سے قبل راؤ انوار کی نقیب اللہ قتل کیس میں ضمانت ہو چکی ہے۔ عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس میں راؤ انوار کی ضمانت منظور کرتے ہوئے ضمانی مچلکوں کے عوض 10 لاکھ روپے جمع کروانے کا حکم بھی دیا تھا۔

(جاری ہے)

راؤ انوار کی ضمانت اغوا اور قتل کے مقدے میں منظور کی گئی تھی۔واضح رہے سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار پر جعلی پولیس مقابلے کرنے کا الزام عائد تھا۔راؤ انوار اس وقت مشکل میں پھنس گئے تھے جب ان پر نوجوان نقیب اللہ کے قتل کا الزام عائد کیا گیا۔سوشل میڈیا پر بھی نقیب اللہ کے اہل خانہ کو انصاف دلانے کے لیے مہم شروع کی گئی۔راؤ انوار کئی دنوں تک مفرور رہے تاہم بعد میں وہ خود ہی عدالت میں پیش ہو گئے تھے۔

عدالت نے نقیب اللہ قتل میں راؤ انوار کی ضمانت منظور کر لی تھی اور اس کے بعد اب ایک اور کیس میں راؤ انوار کی ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔ انسداد دہشتگردی عدالت نے راؤانوارکے خلاف غیرقانونی اسلحہ اور دھماکاخیزمواد رکھنے کے کیس میں ضمانت منظور کی ہے۔عدالت نے راؤ انوار کی ضمانت 10 لاکھ روپے کے مچلکے کے عوض منظور کی ہے۔