جنوبی کوریا کی تین کمپنیوں کی شمالی کوریا سے کوئلے کی غیر قانونی درآمد

ہفتہ اگست 12:10

جنوبی کوریا کی تین کمپنیوں کی شمالی کوریا سے کوئلے کی غیر قانونی درآمد
سیئول ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 اگست2018ء) جنوبی کوریا کے کسٹم کے ادارے کا کہنا ہے کہ جنوبی کوریا کی تین کمپنیوں نے مبینہ طور اقوام متحدہ کی تعزیرات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے روسی مصنوعات کے لبادے میں شمالی کوریا سے کوئلہ درآمد کیا ہے۔امریکی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق جنوبی کوریا شمالی کوریا سے ممکنہ طور پر کوئلہ درآمد کرنے کے 9 معاملات کا جائزہ لے رہا ہے جو کہ گزشتہ سال اگست میں اقوام متحدہ کی طرف سے منظور کی جانے والی قرارداد کی خلاف ورزی میں مبینہ طور پر ہوئی جس کے تحت شمالی کوریا کے میزائل اور جوہری پروگرام کے لیے فنڈ کی فراہمی کو روکنا تھا۔

تاہم جنوبی کوریا کے کسٹم کے ادارے ان کمپینوں کی نشاندہی نہیں کی ہے جو اس میں مبینہ طور پر ملوث ہیں تاہم یہ کہا کہ اپریل اور اکتوبر 2017ء کے دوران تقریباً 35 ہزار ٹن کوئلے جنوبی کوریا میں لایا گیا جس کی مالیت 58 لاکھ ڈالر کی تھی۔

(جاری ہے)

کوریا کی کسٹم سروس کے ڈپٹی کمشنر ،رہو سک ہون نے ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ بظاہر ان کمپنیوں نے شمالی کوریا میں کوئلے کی قیمتیں کم ہونے کی وجہ سے زیادہ منافع حاصل کرنے کے لیے اسے غیر قانونی طریقے سے لایا۔کسٹم کے ادارے نے کہا کہ وہ کمپنیوں اور افراد کے خلاف الزامات عائد کرے گا جنہوں نے کسٹم قوانین کی خلاف ورزی اور دستاویزات میں جعل سازی کا ارتکاب کرنے میں ملوث پائی گئی۔