حافظ آباد شہر کے سنگم میں واقع نیشنل بینک مین برانچ کو گوجرانوالہ روڈ پر منتقل کئے جانے کے خلاف پیشنرز کا احتجاج

فیصلہ سے ہمیں شہر سے باہر ایک کلو میٹر کے فاصلہ پر جانا پڑے گا جو اس عمر میں اذیت کے مترادف ہے، پنشنرز کا شکوہ

اتوار اگست 21:40

حافظ آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اگست2018ء) حافظ آباد شہر کے سنگم میں واقع نیشنل بینک مین برانچ کو گوجرانوالہ روڈ پر منتقل کئے جانے کے خلاف سینکڑوں شہری اور معمر پینشنر سراپا احتجاج بن گئے۔ شہریوں اور معمر پینشنرز کے علاوہ ڈیپازٹ ہولڈرز کی کثیر تعداد نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ بینک مینجمنٹ نیشنل بینک مین برانچ حافظ آباد کو 15ستمبر سے شہر کے سنگم ونیکے چوک سے گوجرانوالہ روڈ پر منتقل کررہی ہے۔

مینجمنٹ کے اس فیصلہ سے معمر پینشنرز ، ڈیپازٹ ہولڈرز اور شہریوں کو شہر سے باہر ایک کلو میٹر کے فاصلہ پر جانے سے نہ صرف شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ بلکہ درمیان میں ریلوے پھاٹک ہونے سے اور ہمہ وقت یہاں پر ٹریفک بلاک رہنے سے بھی بینک کی افادیت متاثر ہوگی۔

(جاری ہے)

شہریوں نے مینجمنٹ سے مطالبہ کیاکہ نیشنل بینک مین برانچ حافظ آباد کو گوجرانوالہ روڈ پر منتقل کرنے کا فیصلہ فوری واپس لیا جائے ۔

یا پھر ونیکے چوک میں مذکورہ بینک کی جگہ نیشنل بینک کی ایک دوسری چھوٹی برانچ بنائی جائے ۔ تاکہ اندرون شہراور نواحی دیہات کے لوگوں کے علاوہ ڈیپازٹ ہولڈرز کی پریشانی کا اذالہ ہوسکے۔ دوسری جانب نیشنل بینک کے مقامی زرائع نے کہا کہ وہ اس سلسلہ میں بے بس ہیں۔ اس ضمن میں بینک کی کراچی میں مینجمنٹ جو فیصلہ کرے گی ۔وہ اس کے پابند ہیں۔

متعلقہ عنوان :