عمران خان کے وزیر اعظم بننے سے قبل ہی اندرون بیرون ملک پاکستان میں واضح تبدیلی محسوس کی جارہی ہے،زلفی بخاری

اتوار اگست 22:20

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اگست2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما زلفی بخاری نے کہا ہے کہ عمران خان کے وزیر اعظم بننے سے قبل ہی اندرون بیرون ملک پاکستان میں واضح تبدیلی محسوس کی جارہی ہے الیکشن جیتنا آسان تھا لیکن 100دن کے اندر اہداف حاصل کرنا مشکل کام ہے عمران خان پر کڑا وقت آنے والا ہے لیکن اگر یوتھ ہمارے شانہ بشانہ رہی تو تمام اہداف حاصل کر لیں گے آنے والے وقت میں پاکستان میں نوجوان بااختیار اور طاقتور ہوں گے نوجوانوں کے عالمی دن کے موقع پر گزشتہ روز مقامی ہوٹل میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے زلفی بخاری نے کہا کہ ہم خوش نصیب ہیں کہ عمران خان جیسا لیڈر ہمارے پاس ہے عمران خان کے خلاف اب غیر ملکی عناصر نے سازشیں شروع کر دی عمران خان کسی صورت میں اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کرینگے جب قیادت کرپٹ نہ ہو تو نچلے طبقے میں کرپشن نہایت کم ہو جاتی ہے الیکشن جیتنا اتنا مشکل نہیں تھا جتنا 100 دن میں اپنا ہدف حاصل کرنا ہے ابھی حکومت بنی نہیں لوگ فوری تبدیلی چاہتے ہیں 2018 کا الیکشن خواتین اور نوجوانوں کی وجہ سے انقلابی الیکشن ثابت ہوا ہے اگلے 5 سال نوجوانوں کا وقت ہو گاانہوں نے کہا کہ عوام نے الیکٹیبلز کو قبول نہیں کیا ہم جو الیکٹیبلز لائے وہ بری طرح ہارے عمران خان کی الیکشن میں کامیابی پر چند ممالک کے اخبارات میں تنقید کی گئی عمران خان کی کامیابی کو فوج سے جوڑنے کے کوشش کی گئی اگر فوج کا ہاتھ ہے تو عمران خان مشرف سے زیادہ طاقتور نہیں تھا مشرف کو بھی ایم ایم اے سے ملکر حکومت بنانا پڑی ہماری حکومت مڈل کلاس کو مضبوط کرے گی تنقید کا مقصد پاکستان کو ترقی کے راستے سے روکنا ہے کچھ ممالک پاکستان کو دہشت گردی غربت کے شکنجے میں دیکھنا چاہتے ہیں امریکہ میں اسلام فوبیا ہے مگر لندن میں ایسا نہیں پوری دنیا عمران خان کے خلاف ہے خان پر سخت وقت آنے والا ہے ہمیں نوجوانوں کی طاقت اور مدد چاہئے ہو گی پہلے یوتھ کے لئے لیڈر شپ نہیں تھی اب لیڈر شپ مل گئی ہے جتنی مخالفت ہوگی ہماری یوتھ اتنی اوپر آئے گی یوتھ کی انوالمنٹ ہر ادارے میں ہوتی ہے، یوتھ کو نیشن بلڈنگ میں خود کو منوانا چاہئے بہت کم ممالک میں نوجوانوں کی اتنی آبادی نہیں ہے جتنی ہمارے ملک میں ہے، اگر اوپر ایماندار انسان بیٹھا ہو تو نیچے کرپشن نہیں ہوگی، ڈاکو کو پکڑا نہ جائے تو وہ ہر رات ڈاکا مارے گا،،عمران خان ایسے پلیئر ہیں جو ہر مقبول ہو گادوسرے ملکوں سے پاکستان میں کاروبار کے لئے لوگ رابطے کر رہے ہیں سی پیک اور دوسرے منصوبوں کے لئے لیبر ہماری ہونی چاہئے۔