بدقسمتی سے پاکستان کے قیام کے فوراً بعد بیوروکریسی و سیاست دانوں کی رسہ کشی کے باعث عدم استحکام کا شکار رہا، انیس قائم خانی

موجود الیکشن اور گذشتہ الیکشنز پر بھی انگلی اُٹھتی رہی ہیں، حالیہ الیکشن میں دھاندلی کے ذریعے پی ایس پی کوشکست کا سامنا کرنا پڑا، صدر پی ایس پی

اتوار اگست 22:20

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اگست2018ء) پاک سرزمین پارٹی کے مرکزی صدر انیس قائم خانی نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے پاکستان کے قیام کے فوراً بعد بیوروکریسی و سیاست دانوں کی رسہ کشی کے باعث عدم استحکام کا شکار رہا اور بعد میں ملک دشمن انڈیا کی ریشہ دوانیوں کے باعث دولخت ہوگیا اب جمہوریت کا سفر جاری ہے حالانکہ موجود الیکشن اور گذشتہ الیکشنز پر بھی انگلی اُٹھتی رہی ہیں، حالیہ الیکشن میں دھاندلی کے ذریعے پی ایس پی کوشکست کا سامنا کرنا پڑا۔

(جاری ہے)

صدر پی ایس پی انیس قائم خانی حیدرآباد کے ایک روزہ تنظیمی دورہ پر پہنچے جہاں انہوں نے ڈسٹرکٹ ، ڈویژن ، ٹائون ، لائرز فورم کمیٹیز ، شعبہ خواتین کے وفود سے علیحدہ علیحدہ میٹنگز کیں اور تنظیمی صورتحال کا جائزہ لیا ، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے انیس قائم خانی نے کہا کہ موجودہ عام انتخابات میں پولنگ ایجنٹس کوباہر نکال کر گنتی کی گئی ان نتائج کو صرف جیتنے والے کسی اورنے تسلیم نہیں کیا، کراچی حیدرآباد کے الیکشن رزلٹ دو دن بعد جاری کئے گئے اس سے نہ جیتنے والوں کو یقین ہے اور نہ ہارنے والوں کو یقین آرہا ہے اور بدحواسی میں 25سی7 سیٹیں حاصل کرنے والے بھی جشن منارہے تھے ، انہوں نے کہا کہ پی ایس پی نے حیر ت انگیز طور پر گذشتہ دو سال میں سندھ و دیگر علاقوں میں تنظیمی اسٹرکچر کھڑا کیا حالیہ الیکشن کے بعد اپنی تنظیمی خامیوں پر نظر ڈال رہے ہیں اور آپ لوگ دیکھیں گے کہ ہم اپنی غلطیوں سے سبق حاصل کرکے ایک نئی آن نئی بان سے جلد کھڑے ہوں گے بہت جلد تنظیمی انٹرویو کا آغاز ہونے والا ہے اور تعلیم یافتہ اور مسائل سے نبرد آزما ہونے والی صلاحتیوں کے حامل لوگوں کو آگے لایا جائے گا، اس موقع پر کارکنان نے الیکشن اور اس کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر سوال و جواب کئے انہوں نے پی ایس پی کے کارکنان کو تلقین کی کہ جشن آزادی کو بھر پور طریقہ سے منایا جائے بلکہ پاکستان کے قیام کی تاریخی خود بھی پڑھیں اور خصوصاً نوجوان نسل کو بھی اس سے آگاہ کریں ، تاکہ عوام میں جذبہ حب الوطنی بڑھ سکے ۔