وزارء کو عید کی دو چھٹیاں مل گئیں

عید کی سرکاری چھٹی نہ ہوتی تو آپکو بھی چھٹی نہ ملتی،میں 16 گھنٹے کام کروں گا تو آپکو بھی 14 گھنٹے کام کرنا ہوگا،وزیر اعظم عمران خان

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس پیر اگست 18:59

وزارء کو عید کی دو چھٹیاں مل گئیں
اسلام آباد(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔20 اگست 2018ء) وزارء کو عید کی دو چھٹیاں مل گئیں۔وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عید کی سرکاری چھٹی نہ ہوتی تو آپکو بھی چھٹی نہ ملتی،میں 16 گھنٹے کام کروں گا تو آپکو بھی 14 گھنٹے کام کرنا ہوگا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے ہفتے کو ملک کے 22ویں وزیراعظم کے طور پر حلف اٹھایا تھا۔جس کے بعد انہوں نے باقاعدہ وزیر اعظم آفس کا چارج سنبھال لیا۔

اس موقع پر انہوں نے اپنی 20 رکنی کابینہ بھی تشکیل دی ۔20 رکنی وفاقی کابینہ میں وزارت خارجہ کا قلمدان شاہ محمود قریشی، انسانی حقوق کی وزارت کا قلمدان شیریں مزاری کوسونپا گیا ہے۔ جبکہ غلام سرور خان وزیر پٹرولیم، نورالحق قادری مذہبی امور، فروغ نسیم قانون و انصاف کے وزیر ہوں گے۔

(جاری ہے)

اسی طرح دفاعی پیداوار کیلئے زبیدہ جلال ، اطلاعات ونشریات کیلئے، وزارت ریلوے کا قلمدان شیخ رشید کوسونپ دیا گیا ہے۔

وزیراعظم نے وزارت دفاع پرویز خٹک سونپی ہے جبکہ طارق بشیر چیمہ ریاستی اور سرحدی امور،اسد عمروفاقی وزیرخزانہ ہوں گے۔اسی طرح شفقت محمودفیڈرل ایجوکیشن اینڈ پروفیشنل ٹریننگ،خالد مقبول صدیقی انفارمیشن ٹیکنالوجی اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن ،فہمیدہ مرزا وزیربین الصوبائی رابطہ اور عامر محمود کیانی وزیرصحت ہوں گے۔اسی طرح وفاقی کابینہ میں 5مشیر بھی نامزد کردیے گئے ہیں۔

ان میں ظہیرالدین بابراعوان مشیر پارلیمانی امور، امین اسلم مشیر ماحولیات،ڈاکٹر عشرت حسین کومشیر اصلاحات،عبدالرزاق داؤد کومشیر برائے اقتصادیات اورمحمد شہزاد ارباب مشیر اسٹیبلشمنٹ کونامزد مقرر کیا گیا ہے۔وزیر اعظم آفس کا چارج سنبھالتے ہی عمران خان نے نئے پاکستان کی جھلک دکھا دی اور اتوار کو بھی اپنے گھر آرام کرنے کی بجائے آفس پہنچ گئے۔

اب تازہ ترین اطلاعات کے مطابق وزرا کو بھی عید کی محض 2 چھٹیاں دی گئی ہیں۔وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ دو چھٹیاں بھی سرکاری نہ ہوتیں تو آپکو ہر گز چھٹی نہ ملتی ۔وزیر عمران خان کا کہنا تھا کہ ہفتے میں 2 مرتبہ کابینہ کا اجلاس ہوگا۔اس کے بعد وزیر اعظم کا مزید کہنا تھا کہ میں 16 گھنٹے روزانہ کی بنیاد پر کام کروں گا اور وزرا اور مشیروں کو بھی 14 گھنٹے کام کرنا ہوگا۔