سابق وزیراعظم نوازشریف کوترک صدرکا فون،اظہارتعزیت کیا

اللہ بیگم کلثوم نواز کی مغفرت فرمائے اور ان کی وفات پراہلخانہ کوصبر جمیل عطا فرمائے، سابق وزیراعظم نوازشریف سے ترک صدر طیب اردوان کا اظہارافسوس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعرات ستمبر 20:33

سابق وزیراعظم نوازشریف کوترک صدرکا فون،اظہارتعزیت کیا
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13ستمبر 2018ء) پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نوازشریف کو ترک صدر طیب اردوان نے ٹیلی فون کیا، جس میں انہوں نے نوازشریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نوازکی وفات پراظہار تعزیت کیا، ترک صدر نے سابق خاتون اول بیگم کلثوم نوازکی وفات پراظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ اللہ بیگم کلثوم نواز کی مغفرت فرمائے اور ان کے درجات بلند فرمائے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کو ترک صدر طیب اردوان نے ٹیلی فون کرکے اظہار افسوس کیا ہے۔ ترک صدر طیب اردوان نے سابق وزیراعظم نوازشریف سے ٹیلیفون پراظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ اللہ آپ کواور آپ کے اہلخانہ کوصبر جمیل عطا فرمائے۔انہوں نے کہا کہ اللہ بیگم کلثوم نواز کی مغفرت فرمائے اور ان کے درجات بلند کرے۔

(جاری ہے)

واضح رہے سابق خاتون اول بیگم کلثوم نوازکی لندن میں نمازجنازہ ادا کردی گئی۔

لندن ریجنٹ پارک مسجد میں کلثوم نوازکی نمازجنازہ امام شیخ خلیفہ عزت نے پڑھائی۔ نمازجنازہ میں مرحومہ کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز، سمدھی اسحاق ڈار، شہبازشریف، چوہدری نثار، عزیز واقارب، سابق وزیراعظم چودھری عبدالمجید سمیت پاکستانی کمیونٹی کے افراد نے شرکت کی۔ دوسری جانب اطلاعات ہیں کہ بیگم کلثوم نوازکی میت کل صبح6 بجے لاہور ایئرپورٹ پرپہنچ جائے گی۔

کلثوم نواز کی میت پی کے758 کے ذریعے پاکستان لائی جائے گی۔جس کے بعد ان کی نماز جنازہ جاتی امراء میں شریف میڈیکل سٹی کے گراؤنڈ میں ادا کی جائے گی۔ کلثوم نواز کی تدفین ان کے مرحوم سسرمیاں شریف کے پہلو میں کی جائے گی۔ شہبازشریف کلثوم نوازکی میت لینے کیلئے لندن پہنچ گئے ہیں۔ واضح رہے سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز لندن میں11ستمبر بروزمنگل کوانتقال کرگئی تھیں۔

کلثوم نوازکینسر کے مرض میں مبتلا تھیں، ایک سال25 دن لندن میں زیرعلاج رہیں، انہیں پھیپھڑوں کی سنگین بیماری کے باعث اسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ خالق حقیقی سے جا ملیں۔ کلثوم نواز17اگست 2017 میں کینسر کی بیماری کے علاج کیلئے لندن گئی تھیں۔ گزشتہ سال 22 اگست کوکلثوم نواز کی بیماری کی تصدیق ہوئی تھی۔ بیگم کلثوم نواز13مہینے لندن میں زیرعلاج رہیں۔ سابق خاتون اول بیگم کلثوم نوازکی وفات کے بعد ان کے شوہر سابق وزیراعظم نوازشریف ،بیٹی مریم نواز، داماد کیپٹن ر صفدرجوکہ ایون فیلڈ ریفرنس میں اڈیالہ جیل میں قید کاٹ رہے ہیں ۔ان کوپیرول پررہائی دی گئی۔ تاکہ وہ اپنی اہلیہ کے نمازجنازہ میں شرکت کرسکیں۔