نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی رہائی کی مدت میں مزید توسیع کردی گئی

محکمہ داخلہ پنجاب نے سابق وزیراعظم، ان کی صاحبزادی اور ان کے داماد کی پیرول میں رہائی کی مدت پیر کی شام 4 بجے تک بڑھا دی

muhammad ali محمد علی جمعرات ستمبر 22:34

نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی رہائی کی مدت میں مزید ..
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 13 ستمبر 2018ء) نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی رہائی کی مدت میں مزید توسیع کردی گئی، محکمہ داخلہ پنجاب نے سابق وزیراعظم،، ان کی صاحبزادی اور ان کے داماد کی پیرول میں رہائی کی مدت پیر کی شام 4 بجے تک بڑھا دی ۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو بیگم کلثوم نواز کی رحلت کے باعث 2 روز قبل رہا کر دیا گیا تھا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو ابتدائی طور پر پیرول پر 12 گھنٹے کیلئے رہائی دی گئی تھی۔ رہائی کے بعد سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو خصوصی طیارے کے ذریعے اسلام آباد سے لاہور لایا گیا اور بعد ازاں انہیں ان کی خاندانی رہائش گاہ جاتی امراء رائیونڈ منتقل کر دیا گیا۔

(جاری ہے)

سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو پیرول پر رہائی دینے کے علاوہ جاتی امراء کو سب جیل بھی قرار دے دیا گیا۔ اس حوالے سے پنجاب حکومت کی جانب سے بتایا گیا کہ قانون کے مطابق کسی مجرم کو پیرول پر 12 گھنٹے کیلئے ہی رہائی ملتی ہے۔ اسی لیے سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو پیرول پر 12 گھنٹے کیلئے رہا کیا گیا ہے۔

تاہم پیرول پر رہائی میں ہر 12 گھنٹے بعد اضافہ کیا جاتا رہے گا۔ اب اس حوالے سے محکمہ داخلہ پنجاب نے ایک نیا نوٹیفیکشن جاری کر دیا ہے۔ نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی رہائی کی مدت میں مزید اضافہ کر دیا گیا ہے۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی پیرول میں رہائی کی مدت پیر کی دوپہر 4 بجے تک بڑھا دی ہے۔ اس سے قبل اتوار کی شب 12 بجے تک نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو رہائی دینے کا نوٹیفیکشن جاری کیا گیا تھا۔ تاہم اب بیگم کلثوم نواز کی آخری رسومات کی ادائیگی کے سلسلے میں رہائی کی مدت میں دوبارہ مزید اضافہ کردیا گیا ہے۔