اسٹرابیریز میں سے سوئیاں نکلنا دہشت گردی کے برابر ہے، آسٹریلوی وزیراعظم

ایساگھنائونا جرم کرنے والوں کے لیے 10سے 15سال سزائے قید، اطلاع دینے والے کے لیے ایک لاکھ ڈالر انعام

بدھ ستمبر 14:50

کینبرا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 ستمبر2018ء) آسٹریلیا میں اسٹرابیریز میں سے سوئیاں نکلنے کے واقعات کے بعد عوام میں تو خوف و ہراس پھیلا ہی تھا، لیکن اب آسٹریلوی وزیراعظم اسکوٹ موریسن نے اسے دہشت گردی کے برابر قرار دے ڈالا ہے۔جرمن ریڈیو کے مطابق آسٹریلوی وزیراعظم نے کہا کہ میں اس معاملے کو بالکل اسی طرح سے سنجیدگی سے لے رہا ہوں، جس طرح بچوں کی غیراخلاقی ویڈیوز بنانا یا دہشت گردی کی مالی معاونت کرنا ایک سنگین جرم ہے۔

(جاری ہے)

وزیراعظم اسکوٹ موریسن نے پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا کہ خوراک کو اس طرح سے زہرآلود کرنے والے کے لیے زیادہ سے زیادہ 10 سے 15 برس قید کی سزا مقرر کی جائے۔دوسری جانب آسٹریلوی ریاست کوئنزلینڈ کی حکومت نے اسٹرابیریز میں مبینہ طور پر سوئیاں چھپانے والے شخص کی اطلاع دینے والے کے لیے 1 لاکھ آسٹریلوی ڈالر انعام کا اعلان کیا ہے۔آسٹریلیا کے وفاقی وزیر صحت گریگ ہنٹ نے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے فوڈ اسٹینڈرز کو یہ حکم بھی جاری کیا ہے کہ اس بات کی تحقیقات کی جائیں کہ اس مسئلے کی شروعات کہاں سے ہوئیں۔ان کا کہنا تھا کہ اگر یہ سپلائی چین کا مسئلہ ہے تو اسے بروقت ٹھیک کریں کیوں کہ ہمارا مقصد عوام کی حفاظت اور انہیں نقصان پہنچنے سے بچانا ہے۔