او آئی سی نے رکن ممالک کے وزرائے خارجہ کے لئے سالانہ رابطہ اجلاس کے انعقادکی تیاریاں مکمل کر لی

ہفتہ ستمبر 10:50

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 ستمبر2018ء) اسلامی تعاون کی تنظیم (او آئی سی) نے 25 ستمبر 2018 کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر اپنے رکن ممالک کے وزرائے خارجہ کے لئے سالانہ رابطہ اجلاس کے ساتھ ساتھ مسلم امہ کو درپیش مسائل اور پیش رفتوں سے متعلق رابطہ گروپوں کے اجلاس کے انعقادکی تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔ جمعہ کو یہاں مو صولہ پریس ریلیز کے مطابق او آئی سی کے سربراہ ڈاکٹر یوسف العثیمین اعلیٰ سطحی وفد کے ہمراہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لئے نیو یارک جا رہے ہیں۔

او آئی سی کے سیکرٹری جنرل کے ایجنڈے میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران سربراہان مملکت، رکن اور غیر رکن ممالک کے وزرائے خارجہ اور دیگر سینئر حکام کے علاوہ بین الاقوامی اور علاقائی تنظیموں کے سربراہان سے دو طرفہ ملاقاتیں شامل ہیں۔

(جاری ہے)

العثیمین کی یمن، شام اور ساحل ریجن سے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاسوں میں شرکت بھی متوقع ہے۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسبلی کے اجلاس کے دوران او آئی سی کے رکن ممالک کے وزرائے خارجہ کا سالانہ رابطہ اجلاس 28 ستمبر کو منعقد ہو گا، اجلاس کے دوران مسلم دنیا میں ہونے والی پیش رفتوں، بالخصوص فلسطین کے مسئلہ پر تشویش اور دہشت گردی اور اسلامو فوبیا دنیا میں مسلم کمیونٹی کو درپیش مسائل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔او آئی سی وزرائے خارجہ کی سطح پر فلسطین، جموں و کشمیر ،یمن، آذربائیجان کے خلاف ارمینیا کی جارحیت، مالے، سیرا لیون، رونگھیا، بوسنیا اور ہرزگووینا سمیت یورپ میں مسلمانوں سے متعلق رابطہ گروپوں کے اجلاس اور ثالثی کے دوستوں کا پہلا اجلاس بھی منعقد ہوں گے۔

او آئی سی سعودی عرب کے تعاون سے میانمار کی رونگھیا کی اقلیت کی صورتحال پر اعلیٰ سطحی تقریب کا بھی اہتمام کر رہی ہے۔