حضرت امام حسین ؓنے اپنی جان کا نذرانہ دیکر اُمت کو وحدت کا در س دیا ‘چوہدری محمد سرور

سیدنا امام حسین نے جان کی قربانی دے دی مگر اصولوں پر سمجھوتہ نہ کیا‘ گورنر پنجاب سے مولانا سید عبد الخبیر آزاد کی سر براہی میں مجلس علماء پاکستان کے نمائندہ علماء کرام و مذہبی راہنماؤ ں کی ملاقات ْ شہدا ئے کربلا نے عظیم قربانیاں دے کر دین اسلام کو زندہ کیا ‘ مولانا سید عبد الخبیر آزاد

ہفتہ ستمبر 19:09

حضرت امام حسین ؓنے اپنی جان کا نذرانہ دیکر اُمت کو وحدت کا در س دیا ‘چوہدری ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 ستمبر2018ء) گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے مولانا سید محمد عبد الخبیر آزاد خطیب امام باد شاہی مسجد لاہور و چیئر مین مجلس علماء پاکستان کی سربراہی وقیادت میں تمام مکاتب فکرکے نمائندہ جید علماء کرام کے وفد کی ملاقات ہوئی ،ملاقات میں عاشورہ محرم الحرام میں امن و امان کے سلسلہ میں جملہ مکاتب فکر کے علماء کرام کی کوششوں کو سراہا گیا، اور اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ پاکستان ہمارا ملک ہے اور اس کو آگے لیکر چلنے میں ہمیشہ ہم اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے،مولانا سید عبد الخبیر آزاد نے افتتاحی کلمات ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہم عزت ماٰب گور نر پنجاب حوہدری محمد سرور کاشکریہ ادا کرتے ہیں کہ انہوں نے ہمیں اپنا قیمتی وقت دیا اور دوبارہ گورنر بننے پر علماء آپ کو مبارکباد پیش کرتے ہیں، یقینا ملک و قوم کیلئے آپ کی خدمات اور وزیر اعظم عمران خان کی اس مملکت خداد پاکستان کی تعمیر و ترقی اور استحکام اور وطن عزیز کو مزید آگے لے جانے کیلئے اقدامات قابل تحسین ہیں ،علماء کرام کا یہ نمائندہ وفد محرم الحرام اور پورے سال میں بین المسالک اور بین المذاہب ہم آہنگی کے فروغ کیلئے ان کی بے مثال جد وجہد اور خدمات ہیں اور ایک مثالی کر دار ہمیشہ سے رہا ہے ،اور ان شاء اللہ آئندہ بھی اس طرح جاری رہے گا، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرورنے اس موقع پر مولانا سید عبد الخبیر آزاد اور تمام مسالک کے علماء کرام اوردیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والے راہنما ؤں کی کوششوں کو سراہا اور انہوں نے کہا کہ محرم الحرام کے مہینے میں پولیس انتظامیہ کبھی امن قائم نہیں رکھ سکتے جب تک تمام علماء کرام اس میں تعاون نہ کریں اور افہام و تفہیم کو آپس میں نہ رکھیں، مجھے خوشی ہوئی کہ تمام مسالک کے علماء کرام کی طرف سے یہ یقین دھانی کرائی گئی ہے ان شاء اللہ کل کا دن 10محرم الحرام امن و سکون سے گذرے گا، حضرت امام حسین اور ان کے 72تنوں کی شہادتیں ہمیں ایثار قربانی اور رواداری کا درس دیتی ہیں آئیں ہم سب مل کر ان کے پیغام کو عام کریں ،حضرت سیدنا امام حسینh نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کر کے امت کو وحدت کا درس دیا اوران کی قربانی ظلم کی خلاف تھی اس کو ہم سب تسلیم کرتے ہیںوہ ظلم کے خلاف سینہ سپر ہو گئے،اللہ تعالیٰ کا احسان اور شکر ہے کہ تمام معاملات خوش اسلوبی سے چل رہے ہیں ہم یقین رکھتے ہیں کہ یہ محرم الحرام بھی امن و سکون سے گذرے گا، یقینا آپ کی سوچ اور مشاورت سے ان مقاصد کو حل کیا جا سکتا ہے ،جو کہ مذہبی معا ملات ہیں ،حضرت قائد اعظم کے اس فرمان کو جو انہوں نے قیام پاکستان کے وقت مذاہب کے بارے میں دیا اس کو عام کرنے کی ضرورت ہے ،انہوں نے مزید کہا کہ اسلام دین ِ امن ہے جو امحبت و امن اورسلامتی کی بات کرتا ہے، ہمیں بھی مل کر اس کو عام کرنے کی ضرورت ہے ،اجلاس میں علماء کرام جن میں مولانا مفتی مبشر احمد ، علامہ زبیر احمد ظہیر ،مولانا اسد اللہ فاروق ،علامہ مشتاق حسین جعفری،مولانا عبد الوہاب روپڑی ،مولانا مسعود قاسم قاسمی، مولانا عبد الستار نیازی ،قاری محمد عارف سیالوی ،آر بشپ آف لاہور بشپ سبسٹن شا،علامہ میرآصف اکبر ،سید نو بہار شاہ، توقیربابا،سردار جن سنگھ، حافظ شعیب الرحمن ،مولانا ایوب خان ،صاحبزادہ فیض القادری ،مولانا نعمان حامد ،سید عبد القدیر آزاد، قاری ظہور احمد ،مفتی عبد المعید اسد ،سید عبد البصیر آزاد،قاری حافظ اسد،سید عبد الکبیر آزاد مفتی ارشاد حقانی ،حافظ سید عبد لرزاق آزاد،مولانا شکیل الرحمن ناصر،صاحبزادحافظ سید عبدالرازق آزاد،مولانا مفتی سیف اللہ خالدو دیگر علما کرام و مذہبی راہنماؤں نے شرکت کی ،آخرمیں ایک مرتبہ پھر مولانا سید عبدالخبیر آزاد نے گورنر چوہدری محمد سرور کا شکریہ ادا کیا اور دعا کے ساتھ یہ ملاقات اپنے اختتام کو پہنچی۔